Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں نامزد عہدوں پر تقررات کا مسئلہ ٹال مٹول کا شکار

تلنگانہ میں نامزد عہدوں پر تقررات کا مسئلہ ٹال مٹول کا شکار

دسمبر میں غور و خوض ممکن ، برسر اقتدار پارٹی قائدین و کارکنوں میں مایوسی
حیدرآباد ۔ 28۔ اکتوبر (سیاست نیوز) تلنگانہ میں نامزد عہدوں پر تقررات کا مسئلہ پھر ایک بار ڈسمبر تک ٹال دیا گیا ہے جس سے برسر اقتدار پارٹی کے قائدین اور کارکنوں میں مایوسی دیکھی جارہی ہے۔ جون 2014 ء میں ٹی آر ایس حکومت کی تشکیل کے بعد سے نامزد سرکاری عہدوں پر تقررات نہیں کئے گئے ، جب کبھی اس سلسلہ میں قائدین نے نمائندگی کی تو چیف منسٹر نے ہمیشہ جلد تقررات کا تیقن دیا۔ گزشتہ 17 ماہ سے سرکاری عہدوں کے خواہشمند قائدین کی مایوسی میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ گزشتہ دنوں چیف منسٹر نے لیجسلیچر پارٹی اجلاس میں اعلان کیا تھا کہ دسہرہ تک مندر کمیٹیوں اور مارکٹ کمیٹیوں پر تقررات مکمل کرلئے جائیں گے لیکن دسہرہ کا تہوار گزر گیا ، پھر بھی تقررات نہیں کئے گئے۔ ورنگل لوک سبھا حلقہ کے ضمنی انتخابات کی تاریخ کے اعلان کے بعد چیف منسٹر نے تقررات کو ڈسمبر تک ٹال دیا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ ضمنی انتخابات میں پارٹی کی کامیابی کو یقینی بنانے کیلئے قائدین کو متحرک کرنے کیلئے نامزد عہدوں پر تقررات نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ چیف منسٹر کے قریبی ذرائع نے بتایا کہ ورنگل ضمنی چناؤ کے بعد پارٹی گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے مجوزہ انتخابات کی تیاریوں میں مصروف ہوجائے گی۔ لہذا امکان ہے کہ نامزد عہدوں پر تقررات کا عمل مزید آگے بڑھ سکتا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات کے بعد نامزد عہدوں پر تقررات کا جائزہ لیا جائے گا۔ پہلے مرحلہ میں مارکٹ کمیٹیوں پر تقررات کئے جائیں گے جس کے بعد کارپوریشن اور بورڈس کی فہرست تیار کی جائے گی۔ تقررات کا عمل بار بار ٹال دیئے جانے کے باعث پارٹی کے قائدین اور کارکن اپنے متعلقہ عوامی نمائندوں اور وزراء پر دباؤ بنا رہے ہیں کہ وہ چیف منسٹر کو جلد تقررات کیلئے راضی کریں۔ جب کبھی چیف منسٹر جلد تقررات کا تیقن دیتے ہیں، وزراء کے پاس پارٹی قائدین اور کارکنوں کی نمائندگیوں میں اضافہ ہوجاتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT