Sunday , November 19 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں پسماندہ طبقات کا اتحاد وقت کی اہم ضرورت

تلنگانہ میں پسماندہ طبقات کا اتحاد وقت کی اہم ضرورت

کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا کا ریاستی جلسہ ، غدر ، سدھاکر ریڈی اور دیگر کا خطاب
حیدرآباد۔2 اگست(سیاست نیوز)کمیونسٹ پارٹی آف انڈیاکے کے زیر اہتمام نمائش میدان میں منعقدہ ریاستی جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے انقلابی گلوکا ر غدر نے کہاکہ تلنگانہ میںپسماندہ طبقات کا اتحاد وقت کی اہم ضرورت ہے ۔غدر نے کہاکہ اونچی ذات والوں کو اس بات کا ہنر حاصل ہے کہ وہ کس طرح دلت ‘ قبائیلی ‘ پچھڑے اور اقلیتوں پر حکمرانی کریں۔ انہوں نے اپنے روایتی انداز میں پسماندہ طبقات کی آبادی پر مشتمل تناسب پیش کرتے ہوئے کہاکہ ایک فیصد سے بھی کم اونچی ذات والے لوگ ہمیشہ اقتدار پر فائز رہتے ہیں۔حصول تلنگانہ کا مقصد ہی ختم کردیاگیا۔ سنہری تلنگانہ کا خواب دیکھا کر اقتدار تو حاصل کرلیاگیا مگر عوام سے کئے گئے وعدوں کو اب تک پورا نہیںکیاگیا۔ سی پی آئی قومی سکریٹری ایس سدھاکر ریڈی حکومت تلنگانہ سے مطالبہ کیاکہ وہ کسانوں پر خرچ کئے جانے والے پیسوں کے متعلق وائٹ پیپر کی اجرائی عمل میںلائے کیوں کہ تین سال کا عرصہ گذ ر جانے کے بعد آج بھی کارپوریٹ اسکولس اور کالجوں کے علاوہ اعلی تعلیمی اداروں کی اجارہ داری ہنوز جاری ہے جبکہ حکومت نے اپنے منشور میں کے جی سے پی جی تک مفت تعلیم کا وعدہ کیاتھا ۔ مفت تعلیم کے وعدے کو عملی جامہ پہنانے کے بجائے حکومت خانگی ذریعہ تعلیم کو ریاست میںمزید مستحکم بنانے کی کوشش کررہی ہے۔ مسٹر سدھاکر ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ کی تشکیل کے بعد آج بھی میڈیکل میںداخلوں کے خواہش مند طلبہ کو کروڑ ہا روپئے خرچ کرنا پڑرہا ہے ۔ انہوں نے اس موقع پر قومی سطح پر مذہب کے نام پر جاری بربریت کی بھی شدت کے ساتھ مخالفت کی اور مودی حکومت کے خلاف سی پی آئی کے محاذی تنظیمیں اے آئی وائی ایف او راے آئی ایس ایف کے زیراہتمام نکالے گئے لانگ مارچ کا بھی تذکرہ کیا۔پروفیسر کودنڈا رام نے تلنگانہ میںکسانوں کی حالت زار پر تشویش کا اظہار کیا ۔انہوں نے کہاکہ حکومت کی غلط کسان پالیسی کے سبب کسان طبقہ آج مزدوری کرنے پر مجبور ہوگیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ تلنگانہ کا کسان بینک لون سے محروم ہے ۔ تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے زیراہتمام جاری بس یاترا کے دوران متاثرہ کسانوں سے ملاقات کی تفصیلات پیش کرتے ہوئے پروفیسر کودنڈارام نے کہاکہ ریاستی حکومت کسانوں کے متعلق غیر سنجیدہ ہے۔ انقلابی گلوکارہ ویملا نے خود ساختہ گائو رکھشکوں کے خلاف انقلابی گیت پیش کیا ۔سابق ایم پی راجیہ سبھا سیدعزیز پاشاہ ‘ سی پی آئی ایم سکریٹری ٹی ویرا بھدرم ‘ہیومن رائٹس جہدکار جیون کمار‘ جانکی رام‘پروفیسر ہرا گوپال ‘ پروفیسرایل ویشویشوار رائو‘کے علاوہ بائیں بازو جماعتوں او رسماجی تنظیمو ںکے سرکردہ قائدین نے بھی خطاب کیا۔ جلسہ کی کاروائی سی پی آئی اسٹیٹ سکریٹری چاڈا وینکٹ ریڈی نے چلائی۔ اروندیا کی جانب سے اس موقع پر انقلابی گیت پیش کئے گئے۔

TOPPOPULARRECENT