Tuesday , June 19 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں کانگریس اور تلگودیشم کو عوام نے بری طرح مسترد کردیا

تلنگانہ میں کانگریس اور تلگودیشم کو عوام نے بری طرح مسترد کردیا

ٹی آر ایس کسی بھی جماعت کی تائید کے بغیر حکومت تشکیل دے گی، ایٹالہ راجندر

ٹی آر ایس کسی بھی جماعت کی تائید کے بغیر حکومت تشکیل دے گی، ایٹالہ راجندر

حیدرآباد۔/3مئی، ( سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی کے فلور لیڈر ای راجندر نے کہا کہ تلنگانہ میں ٹی آر ایس کسی جماعت کی تائید کے بغیر حکومت تشکیل دے گی۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ای راجندر نے کہا کہ مختلف گوشوں سے تلنگانہ میں معلق اسمبلی کی پیش قیاسی کی جارہی ہے لیکن حقیقت یہ ہے کہ تلنگانہ عوام نے ٹی آر ایس کے حق میں واضح طور پر فیصلہ دیا ہے۔ لہذا ٹی آر ایس کی حکومت کا قیام یقینی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی معلق اسمبلی کی صورت میں دیگر جماعتوں کی تائید کے ساتھ تشکیل حکومت کا دعویٰ کررہی ہے حالانکہ انتخابی مہم اور رائے دہی کے موقع پر یہ واضح ہوگیا کہ عوام ٹی آر ایس کی حکومت کے حق میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عوام چاہتے ہیں کہ ٹی آر ایس برسر اقتدار آئے تاکہ ان کے مسائل کی یکسوئی ہوسکے۔ سنہری تلنگانہ میں تبدیلی صرف ٹی آر ایس سے ہی ممکن ہے اور ٹی آر ایس نے انتخابی منشور میں جو وعدے کئے ہیں ان پر عمل آوری اولین ترجیح ہوگی۔ راجندر نے کہا کہ ٹی آر ایس کا ایجنڈہ تلنگانہ کی ترقی ہے اور اسی بنیاد پر انتخابی منشور تیار کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ 60برسوں کے دوران تلنگانہ کے ساتھ جو ناانصافی ہوئی ہے اس کا ازالہ صرف ٹی آر ایس کی حکومت سے ممکن ہے۔ ٹی آر ایس تلنگانہ عوام کے دلوں میں بسی ہوئی ہے اور عوام کی خواہش ہے کہ ان کی پارٹی ہی اقتدار میں آئے۔ کانگریس اور تلگودیشم کو عوام نے بری طرح مسترد کردیا ہے۔ کانگریس قائدین کی جانب سے ٹی آر ایس سربراہ چندر شیکھر راؤ کو تنقید کا نشانہ بنانے پر سخت اعتراض کرتے ہوئے راجندر نے کہا کہ کانگریس قائدین منصوبہ بند انداز میں کے سی آر کے خلاف مہم چلارہے ہیں تاکہ ان کا امیج متاثر کیا جاسکے۔انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ کانگریس قائدین نے کبھی بھی تحریک میں کھل کر حصہ نہیں لیا جبکہ ٹی آر ایس قائدین نے تلنگانہ کاز کیلئے اپنے عہدوں کی قربانی دی اور مقدمات کا سامنا کیا۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ عوام علاقہ میں یکساں ترقی کے خواہاں ہیں۔ ریاست میں برقی سربراہی کی ابتر صورتحال کا حوالہ دیتے ہوئے راجندر نے کہا کہ انتخابات سے قبل ٹی آر ایس نے گورنر سے نمائندگی کی تھی کہ دیہی علاقوں میں برقی سربراہی کے موقف کو بہتر بنایا جائے کیونکہ گورنر راج کی آڑ میں عہدیدار من مانی کررہے ہیں۔ برقی کی عدم سربراہی کے سبب فصلوں کو بھاری نقصان پہنچا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے اس جانب توجہ نہیں کی جس کے باعث کسانوں کو نقصان سے دوچار ہونا پڑا۔ راجندر نے گورنر سے اپیل کی کہ وہ زرعی شعبہ کو مناسب برقی کی سربراہی پر خصوصی توجہ مرکز کریں۔انہوں نے اضلاع میں پینے کے پانی اور آبپاشی سہولتوں کیلئے سربراہی آب جیسے اُمور پر توجہ دینے کی اپیل کی۔ ایک سوال کے جواب میں راجندر نے کہا کہ چندر شیکھر راؤ کی قیادت میں ٹی آر ایس حکومت تمام طبقات کی سماجی، معاشی اور تعلیمی ترقی کیلئے اقدامات کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ جن طبقات سے انتخابی منشور میں وعدے کئے گئے ان پر بہر صورت عمل کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ انتخابی وعدوں کی تکمیل کیلئے وسائل کی فراہمی کوئی مسئلہ نہیں رہے گی۔

TOPPOPULARRECENT