Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں کانگریس پارٹی بحران کا شکار

تلنگانہ میں کانگریس پارٹی بحران کا شکار

کانگریس ایم ایل سی ایم ایس پربھاکر کی ٹی آر ایس میں شمولیت
حیدرآباد /3 دسمبر (سیاست نیوز) کانگریس کے رکن قانون ساز کونسل ایم ایس پربھاکر نے کانگریس کو چھوڑکر ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرلی ہے۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی نے آج دس بجے دن گاندھی بھون میں تلنگانہ پردیش کانگریس کوآرڈینیشن کمیٹی کا اجلاس طلب کیا تھا۔ کانگریس قائدین کونسل اور گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات کا جائزہ لینے کے لئے جمع ہو رہے تھے، لیکن اسی وقت شہر حیدرآباد کی نمائندگی کرنے والے کانگریس کے رکن قانون ساز کونسل ایم ایس پربھاکر نے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے ملاقات کرتے ہوئے حکمراں ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرلی۔ واضح رہے کہ کل ایم ایس پربھاکر نے گاندھی بھون میں منعقدہ سابق چیف منسٹر آنجہانی چنا ریڈی کی برسی تقریب میں شرکت کی تھی، لیکن آج جیسے ہی ان کی ٹی آر ایس میں شمولیت کی اطلاع گاندھی بھون پہنچی ریاستی کانگریس کے صدر اتم کمار ریڈی، ورکنگ پریسیڈنٹ ملو بٹی وکرامارک، قائد اپوزیشن اسمبلی کے جانا ریڈی، قائد اپوزیشن کونسل محمد علی شبیر، سابق ڈپٹی چیف منسٹر دامودھر راج نرسمہا، سابق وزیر پنالہ لکشمیا، ڈاکٹر جے گیتا ریڈی، سریدھر بابو اور دیگر قائدین پر سکتہ طاری ہو گیا۔ ان قائدین نے مستقبل کی حکمت عملی تیار کرنے کی بجائے اضلاع سے منتخب مقامی اداروں کے کانگریس نمائندوں کو پارٹی میں برقرار رکھنے کی حکمت عملی پر غور کیا اور اجلاس کو مختصر کرتے ہوئے میڈیا سے بچ کر نکلنے کی ہر ممکن کوشش کی۔ اسی دوران اتم کمار ریڈی نے گاندھی بھون کے پریس کانفرنس ہال میں پہنچے اور روایت کے برخلاف صرف ایک منٹ میں اپنی بات کہہ کر چلے گئے۔ اس موقع پر انھوں نے ایم ایس پربھاکر کی ٹی آر ایس میں شمولیت کے متعلق پوچھے گئے سوال کا کوئی جواب بھی نہیں دیا۔ واضح رہے کہ کانگریس ہائی کمان نے تلنگانہ کے چار کانگریس قائدین کو دہلی طلب کرکے ورنگل لوک سبھا ضمنی انتخاب میں پارٹی کی شکست کا جائزہ لینے اور مقامی اداروں سے منتخب ہونے والے کونسل کی 12 نشستوں کے انتخابات کی تیاری کا مشورہ دیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT