Friday , September 21 2018
Home / اضلاع کی خبریں / تلنگانہ میں کانگریس کی سونامی یقینی: محمد علی شبیر

تلنگانہ میں کانگریس کی سونامی یقینی: محمد علی شبیر

چیف منسٹرفریبی، ٹی آر ایس سے نجات کیلئے عوام کو انتخابات کا انتظار
یلاریڈی۔/10جنوری، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) یلاریڈی مستقر پر مقامی ایم آر پی فنکشن ہال میں کانگریس پارٹی ارکان کے ساتھ منعقدہ اجلاس سے مسٹر محمد علی شبیر ایم ایل سی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 2019 میں تلنگانہ کے اسمبلی چناو میں کانگریس کی سونامی آکر رہے گی۔ عوام صرف انتخابات کا انتظار کررہے ہیں کہ کب ٹی آر ایس حکومت سے نجات پائیں۔ انہوں نے ریاستی وزیر اعلیٰ کو فریبی کہا اور عوام سے کئے گئے وعدوں کو چار سال گزرنے کو ہیں آج تک پورا نہ کرنے کا الزام لگایا۔ مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات سے لیکر دلتوں کو اراضی فراہم کرنے کا وعدہ اور کئی ایسے وعدے جو وزیر اعلیٰ مسٹر چندرا شیکھر راؤ نے صرف اقتدار پانے کیلئے کرکے بھول گئے۔ عوام کی سونامی جو ووٹوں کی شکل میں کے سی آر کو بہا کر لے جانے کیلئے تیار ہے۔ انہوں نے یلاریڈی رکن اسمبلی رویندر ریڈی پر الزام لگایا کہ رکن اسمبلی نے اپنے عہدہ کا غلط استعمال کرتے ہوئے ان کے خلاف اُٹھنے والی آواز کو پولیس کے شکنجہ میں دبارہے ہیں اور معصوم افراد کے خلاف مقدمات درج کرتے ہوئے اپنا دبدبہ جمارہے ہیں لیکن کانگریس ان معصوم عوام کا استحصال ہونے نہیں دے گی اور ٹی آر ایس کا عوام پر ظلم برداشت نہیں کرے گی۔ انہوں نے 2019 میں تلنگانہ پر کانگریس کا اقتدار یقینی بتایا۔ اس موقع پر ہزاروں کانگریس ارکان نے لنگم پیٹ تا یلاریڈی موٹر بائیک ریالی نکالی، عوام کا سمندر کانگریس کی غیر معمولی طاقت کا کھلے عام مظاہرہ کررہا تھا۔ اس موقع پر نلامڈگو سریندر، سبھاش ریڈی، سریش کمار شٹکر، طاہر بن ہمدان، گنگادھر، پرتاپ ریڈی، جمنا راتھوڑ، جناردھن ریڈی، شیخ مجیب اور چھ منڈلوں سے آئے سینکڑوں کانگریس قائدین موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT