Saturday , November 17 2018
Home / Top Stories / تلنگانہ میں کانگریس ۔ تلگودیشم اتحاد کو واضح اکثریت کی توقع

تلنگانہ میں کانگریس ۔ تلگودیشم اتحاد کو واضح اکثریت کی توقع

راجستھان میں کانگریس کو بھاری، مدھیہ پردیش میں سادہ اکثریت ملنے کی توقع، چھتیس گڑھ میں بی جے پی کیساتھ کانٹے کا مقابلہ ہوگا
الیکشن ریسرچ (C-Voter) کا سروے

نئی دہلی ۔ 9 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ملک کی پانچ ریاستوں میں اسمبلی انتخابات کیلئے انتخابی مہم زور و شور سے جاری ہے۔ سی ووٹر کی جانب سے اوپنین پول جاری کیا گیا جس میں راجستھان میں کانگریس کو 145 نشستوں کے ساتھ بھاری اکثریت سے کامیابی کی پیش قیاسی کی گئی ہے جبکہ مدھیہ پردیش میں کانگریس کو سادہ اکثریت حاصل ہوگی۔ الیکشن ریسرچ (C-Voter) میں سنٹر برائے ووٹنگ اوپنینس اینڈ ٹرینڈس نے نومبر کے دوسرے ہفتہ میں اپنے انتخابی اوپنین پول کو پیش کرتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ میں کانگریس ۔ تلگودیشم اتحاد کو 64 نشستوں کے ساتھ واضح اکثریت حاصل ہوگی لیکن چھتیس گڑھ میں کانگریس کا بی جے پی کے ساتھ کانٹے کا مقابلہ ہوگا۔ چھتیس گڑھ، مدھیہ پردیش، میزورم، راجستھان اور تلنگانہ میں 12 نومبر تا 7 ڈسمبر کے درمیان رائے دہی ہوگی۔ تمام پانچ ریاستوں میں ووٹوں کی گنتی 11 ڈسمبر کو ہوگی۔ راجستھان میں کروائے گئے سروے میں حکمراں بی جے پی کو صرف 45 نشستیں حاصل ہوئی ہیں۔ اس کا ووٹ فیصد 39.7 بتایا گیا ہے۔ اپوزیشن پارٹی کانگریس کو 47.9 فیصد ووٹ حاصل ہورہے ہیں۔ مدھیہ پردیش میں سی ووٹر انتخابی پیش قیاسی میں بتایا گیا ہیکہ بی جے پی کو41.5 فیصد ووٹوں کے ساتھ 107 نشستیں حاصل ہوں گی جبکہ کانگریس کو 42.3 فیصد ووٹ ملیں گے اور اسے 116 نشستوں پر کامیابی ملے گی۔ اوپنین پول میں میزورم کے نتائج کے بارے میں واضح نہیں کیا گیا ہے۔ میزورم میں کسی پارٹی کو واضح اکثریت حاصل نہیں ہوگی۔ میزو نیشنل فرنٹ کو 17 نشستیں ملیں گی اس کے بعد کانگریس کو 12 اور زورم پیپلز موومنٹ کو 9 نشستیں ملنے والی ہیں۔ چھتیس گڑھ میں کانٹے کا مقابلہ ہونے کی پیش قیاسی کرتے ہوئے سی ووٹر پول سروے نے کانگریس کو 41 نشستیں ملنے کا امکان ظاہر کیا ہے اور اس پارٹی کا ووٹ فیصد 42.2 ہوگا۔ دیگر پارٹیوں کو 6 نشستیں ملیں گی جن کا ووٹ فیصد 16.2 فیصد ہوگا۔ چھتیس گڑھ میں بی جے پی کو صرف 43 نشستیں مل رہی ہیں اور اسے سب سے کم 41.6 فیصد ووٹ ملیں گے۔ نومبر کے دوسرے ہفتہ کے انتخابی سروے میں اے بی پی نیوز اور ری پبلک ٹی وی نے پانچ ریاستوں کیلئے ملی جلی پیشن گوئی کی ہے۔ اس کے برعکس سی ووٹر نے دعویٰ کیا ہیکہ راجستھان میں ٹائمس ناو اور انڈیا ٹی وی کیلئے سی این ایکس پول سروے کروایا گیا ہے جس میں بتایا گیا ہیکہ راجستھان میں کانگریس کو 115 جبکہ بی جے پی کو 75 نشستیں ملیں گی۔ اے بی پی کیلئے کروائے گئے سی ایس ڈی ایس سروے میں کانگریس کو 110، بی جے پی کو84 ، سی فور پول سروے برائے ایشیاء نیٹ نے کانگریس کو 130 اور بی جے پی کو 65 نشستیں ملنے کا امکان ظاہر کیا ہے۔ مدھیہ پردیش کیلئے سی ووٹر نے دعویٰ کیا ہیکہ سی این ایکس پول سروے میں بی جے پی کیلئے 122 نشستیں اور کانگریس کیلئے 95 نشستوں کی پیشن گوئی کی گئی ہے۔ سی ایس ڈی ایس نے زعفرانی پارٹی کو 116 اور کانگریس کو 105 نشستیں ملنے کی توقع ظاہر کی ہے۔ چھتیس گڑھ میں سی این ایکس پول سروے کے مطابق بی جے پی کو 50 نشستیں ملیں گی اور کانگریس کو 30 نشستیں حاصل ہوں گی ماباقی پارٹی کو صرف 10 نشستیں ملیں گی جبکہ سی ایس ڈی ایس پول نے بی جے پی کو 56 اور کانگریس کو 25 دیگر کو 9 نشستیں ملنے کی توقع ظاہر کی ہے۔ کانگریس چیف ترجمان رندیپ سرجے والا نے کہا کہ سی ووٹر کے سروے سے دل کو سکون ملتا ہے اور اس میں دلچسپی کی بات نظر آتی ہے۔ چھتیس گڑھ، مدھیہ پردیش، راجستھان میں کانگریس کو کامیابی ملنا یقینی ہے اس کے علاوہ تلنگانہ میں بھی کانگریس برتری پیدا کرے گی۔ بی جے پی ترجمان سونکر شاستری نے اوپنین پول کو مسترد کردیا اس کانگریس کو کامیابی ملنے کا اشارہ دیا گیا ہے۔ انہوں نے زور دیکر کہا کہ ان کی پارٹی حکمرانی والی تین ریاستوں میں نہ صرف دوبارہ حکومت بنائے گی بلکہ تلنگانہ اور میزورم میں بھی حکومت بنانے کی طرف پیشرفت کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ مدھیہ پردیش، چھتیس اور راجستھان میں بی جے پی شاندار فتح حاصل کررہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT