Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں کسانوں کی ابتر صورتحال کیلئے کانگریس ذمہ دار

تلنگانہ میں کسانوں کی ابتر صورتحال کیلئے کانگریس ذمہ دار

10 سالہ اقتدار میں کسانوں کے مسائل یکسر نظر انداز ، ٹی آرا یس رکن پارلیمنٹ کا بیان
حیدرآباد۔ /8ستمبر، ( سیاست نیوز) ٹی آر ایس کے رکن پارلیمنٹ بی سمن نے کانگریس قائدین کی جانب سے حکومت پر کی جارہی تنقیدوں پر برہمی کا اظہار کیا اور کہا کہ کانگریس قائدین حقائق سے ناواقفیت کے باعث اس طرح کے الزامات عائد کررہے ہیں۔ حیدرآباد میں آج میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے سمن نے تلنگانہ میں کسانوں کی موجودہ ابتر صورتحال کیلئے کانگریس پارٹی کو ذمہ دار قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس نے 10سالہ دور اقتدار میں کسانوں اور ان کی بہبود کو یکسر طور پر نظرانداز کردیا تھا۔ حکومت کی لاپرواہی کے سبب مایوس کسانوں نے خودکشی کی اور کانگریس اور تلگودیشم دور حکومت میں خودکشی کے واقعات کا لامتناہی سلسلہ جاری رہا۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس کے برسراقتدار آنے کے بعد سے کسانوں کی بھلائی پر توجہ دی گئی اور کسان مطمئن ہیں۔ انہوں نے کہا کہ غیر موسمی بارش اور خشک سالی کے سبب فصلوں کو جو نقصان ہوا ان کیلئے مناسب امداد فراہم کی گئی۔ سمن نے کہا کہ اقتدار میں رہ کر کسانوں کے مسائل کو فراموش کرنے والے کانگریس قائدین کو کسانوں سے ہمدردی کا کوئی اخلاقی حق نہیں ہے۔ سوامی ناتھن کمیٹی نے زرعی شعبہ کے حق میں جو سفارشات پیش کی تھیں اس پر کانگریس حکومت نے عمل نہیں کیا جس کے نتیجہ میں زرعی شعبہ کی صورتحال مزید ابتر ہوگئی۔ انہوں نے سابق مرکزی وزیر جئے پال ریڈی کی جانب سے حکومت پر مختلف اسکامس میں ملوث ہونے کے الزام کو بے بنیاد قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت مکمل شفافیت کے ساتھ کام کررہی ہے اور جئے پال ریڈی کانگریس دور حکومت میں پیش آئے اسکامس کو بھلاچکے ہیں۔ انہوں نے یاد دلایا کہ بوفورس اسکام میں راجیو گاندھی کے ملوث ہونے کا معاملہ منظر عام پر آیا تھا۔ انہوں نے کانگریس قائدین کو مشورہ دیا کہ وہ ٹی آر ایس حکومت پر تنقید کے بجائے اپنا محاسبہ کریں۔ سمن نے کہا کہ کسانوں کے قرض کی معافی کے معاملہ میں بھی ٹی آر ایس حکومت نے غیر معمولی پہل کی ہے۔ 17ہزار کروڑ سے زائد کے قرض معاف کئے گئے جبکہ کانگریس حکومت نے برسراقتدار پارٹی کے حامیوں کے قرض معاف کئے تھے۔ انہوں نے کہا کہ جل یگنم کے نام پر بھاری بے قاعدگیوں میں ملوث کانگریس قائدین آج کسانوں سے جھوٹی ہمدردی دکھارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نے شدید برقی قلت کے باوجود کسانوں کو 9گھنٹے برقی کی سربراہی کو یقینی بناتے ہوئے کسانوں کا تحفظ کیا۔ انہوں نے بی جے پی صدر کشن ریڈی کی کسانوں کے حق میں کی جارہی یاترا کو سیاسی مقصد براری پر مبنی قرار دیا۔

TOPPOPULARRECENT