Saturday , August 18 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں ’کمیشن‘ کی حکومت اور ’لٹیروں‘ کا راج

تلنگانہ میں ’کمیشن‘ کی حکومت اور ’لٹیروں‘ کا راج

پراجیکٹس کی تعمیر کے نام پر لوٹ کھسوٹ : اتم کمار ریڈی
حیدرآباد۔/21نومبر، ( سیاست نیوز) صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی نے کہا کہ ریاست میں کمیشن کی حکومت اور لٹیروں کا راج چل رہا ہے اور چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ تلنگانہ کیلئے بدشگون ثابت ہورہے ہیں۔ آج گاندھی بھون پہنچ کر اسمبلی حلقہ کلواکرتی کی نمائندگی کرنے والے ٹی آر ایس، تلگودیشم اور وائی ایس آر کانگریس پارٹی سے تعلق رکھنے والے 1000 کارکنوں نے کانگریس میں شمولیت اختیار کی۔ اس موقع پر اے آئی سی سی انچارج سکریٹری تلنگانہ کانگریس اُمور آر سی کنٹیا، سابق وزیر ایس جئے پال ریڈی، رکن پارلیمنٹ نندی ایلیا، ارکان اسمبلی پدماوتی ریڈی اور سمپت کمار کے علاوہ دوسرے قائدین موجود تھے۔ کانگریس کے رکن اسمبلی ومشی چندریڈی کی قیادت میں 1000 کارکن گاندھی بھون پہنچ کر کانگریس میں شمولیت اختیار کی۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے کہا کہ پراجکٹس کی تعمیرات کے نام پر کروڑہا روپیوں کی لوٹ کھسوٹ کی جارہی ہے اور صرف کمیشن کیلئے پراجکٹس کا ڈیزائن تبدیل کیا جارہا ہے۔ بحیثیت رکن پارلیمنٹ محبوب نگر منتخب ہونے کے باوجود محبوب نگر کی ترقی کیلئے کے سی آر نے کوئی ترقیاتی اقدامات نہیں کئے۔ کانگریس پارٹی کے دور حکومت میں محبوب نگر کی ترقی کیلئے بڑے پیمانے پر عملی اقدامات کئے گئے۔ ٹی آر ایس کا ساڑھے تین سالہ دور حکومت صرف جھوٹی تشہیرتک محدود ہوکر رہ گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ محبوب نگر میں آبپاشی پراجکٹ کی تعمیرات کا کانگریس کو اعزاز حاصل ہے۔کلواکرتی پراجکٹ کی کئی سال قبل تجویز تیار کی گئی تھی تاہم کانگریس کے دور حکومت میں 90فیصد پراجکٹ تعمیر کردیا گیا تھا صرف 10 فیصد تعمیراتی کام باقی تھا جو ساڑھے تین سال میں بھی مکمل نہیں کیا گیا۔ ان پراجکٹس کی تعمیرات سے کانگریس کو فائدہ پہنچنے کے خوف سے تعمیری کاموں میں تساہل اور غفلت برتی جارہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT