Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں 13 اضلاع کا اضافہ ، ہر ضلع 60 تا 70 کلو میٹر پر محیط

تلنگانہ میں 13 اضلاع کا اضافہ ، ہر ضلع 60 تا 70 کلو میٹر پر محیط

6 تا 7 منڈلس ، دو ریونیو ڈیویژنس ، ڈسٹرکٹ کلکٹرس کے ساتھ حکومت کی کانفرنس
حیدرآباد۔ 8۔ جون  ( سیاست نیوز) حکومت نے نئے اضلاع کے قیام کے سلسلہ میں ضلع کلکٹرس کے ساتھ مشاورت کا عمل مکمل کرلیا ہے ۔ بتایا جاتاہے کہ مزید 13 نئے اضلاع کے قیام کے سلسلہ میں منصوبہ تیار کیا گیا جسے کابینہ میں مشاورت کے بعد منظوری دی جائے گی ۔ حیدرآباد میں منعقدہ ضلع کلکٹرس کانفرنس میں طئے کیا گیا کہ ہر ضلع 65 تا 70کیلو میٹر پر محیط ہو۔ ضلع کلکٹرس نے اپنے اپنے اضلاع کے ریونیو منڈلس کے اعتبار سے نئے اضلاع کے قیام کے سلسلہ میں حکومت کو تجاویز پیش کی۔ بتایا جاتا ہے کہ 13 سے 14 نئے اضلاع کی تعداد میں اضافہ کیا جائے گا ۔ ہر ضلع میں 6 تا 7 منڈل شامل کئے جائیں گے اور کم سے کم دو ریونیو ڈیویژن ہوں گے۔ بتایا جاتا ہے کہ  ضلع کلکٹرس کے ساتھ 16 مختلف امور پر مشاورت کی گئی اور ان کی رائے حاصل کی گئی، جن میں اضلاع کی نئی حدبندی ، آبادی اور تعلیمی ، سماجی اور معاشی صورتحال جیسے امور شامل ہیں۔ کئی اضلاع کو آبادی کی بنیاد پر اور بعض کو رقبہ کی بنیاد پر تقسیم کیا جاسکتا ہے ۔ حکومت60  تا 70 نئے ریونیو منڈل اور 18 تا 20 ریونیو ڈیویژن کے قیام کا منصوبہ رکھتی ہے۔ رنگا ریڈی ضلع میں موجودہ ریونیو ڈیویژنس کی تعداد برقرار رہے گی۔ ضلع کلکٹرس سے مشاورت کے بعد جن 13 نئے اضلاع کے ناموں پر اتفاق رائے پایا گیا ان میں آچاریہ جئے شنکر (بھوپال پلی ورنگل) ، محبوب آباد (ورنگل) ، یادادری (بھونگیر) ، سوریا پیٹ (نلگنڈہ) ، کاما ریڈی (نظام آباد) ، کمرم بھیم (منچریال) ، بھدرادری (کھمم) ناگر کرنول ( محبوب نگر) ، ونپرتی (محبوب نگر) ، سکندرآباد ، سدی پیٹ (میدک) ، سنگا ریڈی (میدک) اور جگتیال (کریم نگر) شامل ہیں۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کابینی رفقاء سے مشاورت کے بعد ان ناموں کو قطعیت دیں گے۔

TOPPOPULARRECENT