Tuesday , August 21 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں 40 نئے بلدیات کے قیام پر غور : کے ٹی آر

تلنگانہ میں 40 نئے بلدیات کے قیام پر غور : کے ٹی آر

میجر گرام پنچایتوں کو بلدیات میں تبدیل کرنے کی تجویز ، وزیر بلدی نظم و نسق کی کلکٹر سے ویڈیو کانفرنس
حیدرآباد۔15 نومبر (سیاست نیوز) ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق کے ٹی آر نے 40 نئے بلدیات قائم ہونے کے امکانات کا اظہار کرتے ہوئے شہری علاقوں میں عوام کو بنیادی سہولتیں فراہم کرنے کیلئے ضروری اقدامات کرنے کی ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ کلکٹرس کو ہدایت دی۔ اکیڈیمک اسٹاف کالج آف انڈیا کی جانب سے تیار کردہ سوچ سرویکشن 2018ء کی سی ڈی کو جاری کیا۔ 2011ء کی مردم شماری اور حکومت تلنگانہ کی جانب سے کرائے گئے جامع خاندانی سروے کی بنیاد پر 15,000 سے زائد آبادی اپنے والے میجر گرام پنچایتوں کو بلدیات میں تبدیل کرنے کی تجویز سے واقف کرایا۔ موجودہ بلدیات کے احاطہ کو توسیع کرتے ہوئے 3 تا 5 کیلومیٹر کے حدود میں واقع گرام پنچایتوں کو شہروں میں ضم کردیا جائے گا۔ کے ٹی آر نے کلکٹرس کو مشورہ دیا کہ وہ مستقبل کو ذہن میں رکھتے ہوئے ترقیاتی کاموں کی حکمت عملی تیار کریں۔ عوام کو حکومت کی اسکیمات سے مزید فائدہ پہونچانے کیلئے موجودہ میونسپلٹیز کی تعداد میں اضافہ کرنا لازمی ہوگیا ہے۔ رامائم پیٹ، بانسواڑہ، نرساپور جیسے میجر گرام پنچایتوں کو میونسپلٹیز میں تبدیل کرنے کی تجاویز وصول ہورہی ہیں۔ فی الحال کئی شہروں کے درمیان میجر گرام پنچایت ہیں جس کی وجہ سے مختلف اسکیمات پر عمل آوری، منظوریاں، نظم و نسق میں مسائل پیدا ہورہے ہیں جس سے عوام کو مشکلات پیش آرہی ہیں۔ حکومت نے کئی گرام پنچایتوں کو بلدیات میں ضم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ حکومت کے اس فیصلے سے شہروں کی تعداد میں اضافہ ہوگا۔ انہوں نے کلکٹرس کو اس سلسلے میں رپورٹس پیش کرنے کی ہدایت دی۔ وزیر بلدی نظم ونسق نے کلکٹرس کو احکامات جاری کرتے ہوئے 15,000 آبادی والے میجر گرام پنچایتوں کی نشاندہی کرنے کی ہدایت دی۔ کے ٹی آر نے کہا کہ گرام پنچایتوں کی میعاد آئندہ سال جولائی میں مکمل ہورہی ہے۔ منتخب کئے جانے والے گرام پنچایتوں کو ڈی نوٹیفائیڈ کرتے ہوئے قانون کے مطابق میونسپلٹیز کیلئے نوٹیفائیڈ جاری کرنے کی تیاری کرنے کا مشورہ دیا۔ موجودہ قانون سے استفادہ کے معاملے میں وزیر نے کلکٹرس کو مشورہ دیا۔ ضرورت پڑنے پر محکمہ پنچایت راج کے اعلیٰ عہدیداروں سے مشاورت کرنے پر زور دیا۔ وزیر نے آئندہ سال 2018ء میں تلنگانہ کو سوچ سرویکشن میں ملک میں سرفہرست مقام حاصل کرنے کیلئے بلدی کمشنرس، صدرنشین کیلئے خصوصی تربیت کا اہتمام کرنے کا بھی مشورہ دیا۔

TOPPOPULARRECENT