Tuesday , September 18 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ وقف بورڈ میں کشیدگی

تلنگانہ وقف بورڈ میں کشیدگی

سی ای او کے ساتھ گالی گلوج و ہاتھا پائی ، پولیس کی طلبی ، مدینہ مسجد سکندرآباد کی کمیٹی تشکیل پر زور
حیدرآباد۔ 9 مارچ (سیاست نیوز) تلنگانہ وقف بورڈ میں آج اس وقت کشیدگی پیدا ہوگئی جب چیف ایگزیکٹیو آفیسر منان فاروقی سے بعض افراد الجھ گئے اور معاملہ گالی گلوج اور ہاتھاپائی تک پہنچ گیا۔ فریقین کی جانب سے پولیس کو طلب کرلیا گیا جس کے بعد صورتحال قابو میں آئی۔ بتایا جاتا ہے کہ سکندرآباد کی مدینہ مسجد کمیٹی کی تشکیل کے سلسلہ میں بعض افراد طویل عرصہ سے نمائندگی کررہے ہیں۔ حالیہ عرصہ میں وقف بورڈ نے عبوری کمیٹی کو منظوری دی تھی جبکہ مقامی افراد کمیٹی میں تبدیلی یا پھر نئی کمیٹی کی تشکیل کا مطالبہ کررہے ہیں۔ اس سلسلہ میں معاملہ وقف بورڈ کے ایجنڈے میں شامل کیا گیا۔ گزشتہ میٹنگ میں یہ مسئلہ زیر غور نہیں آسکا لہٰذا کل ہفتے کے اجلاس میں اسے شامل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے دو افراد چیف ایگزیکٹیو آفیسر سے رجوع ہوئے۔ بتایا جاتا ہے کہ چیف ایگزیکٹیو آفیسر نے واضح کردیا کہ انہیں کوئی اختیار نہیں ہے اور بورڈ کے فیصلے پر عمل آوری کے پابند ہیں۔ بحث تکرار کے دوران نمائندگی کے لیے آئے افراد نے چیف ایگزیکٹیو آفیسر کے خلاف بعض الزامات عائد کیے اس پر ماحول کشیدہ ہوگیا اور دونوں جانب سے تلخ الفاظ کا تبادلہ عمل میں آیا۔ وقف بورڈ کے ملازمین کی مداخلت کے باوجود صورتحال مزید بگڑ گئی اور گالی گلوج کی نوبت آگئی۔ بتایا جاتا ہے کہ دو افراد میں سے ایک نے فوری پولیس کنٹرول روم کو فون کرتے ہوئے چیف ایگزیکٹیو آفیسر کی جانب سے بدسلوکی کی شکایت کی۔ اس کے جواب میں چیف ایگزیکٹیو آفیسر نے بھی پولیس عابڈس کو فون کرتے ہوئے دو افراد کے رویہ کی شکایت کی۔ بعد میں پولیس کے عہدیدار وقف بورڈ کے دفتر پہنچے اور انہوں نے منان فاروقی سے تحریری شکایت حاصل کی اور تحقیقات کا آغاز کردیا۔ بتایا جاتا ہے کہ حالیہ عرصہ میں چیف ایگزیکٹیو آفیسر سے بحث و تکرار کے واقعات میں اضافہ ہوچکا ہے اور وقف بورڈ میں سکیوریٹی کا کوئی نظم نہیں ہے۔ سکیوریٹی گارڈس کی موجودگی کے باوجود بیرونی افراد عہدیداروں کے ساتھ بحث و تکرار اور گالی گلوج کرتے ہیں۔ وقف بورڈ کے عہدیداروں نے سکیوریٹی کے لیے مستقل طورپر پولیس پکٹ تعینات کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ اسی دوران چیف ایگزیکٹیو آفیسر منان فاروقی نے بتایا کہ کمیٹی کی تشکیل سے ان کا کوئی تعلق نہیں ہے اور اس بارے میں فیصلہ بورڈ کے اجلاس میں لیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT