تلنگانہ و آندھراپردیش کے حج کوٹہ کا اعلان

تقسیم ریاست کے سبب تلنگانہ کے 14000 سے زائد عازمین کو انتخاب سے محرومی کا خدشہ

تقسیم ریاست کے سبب تلنگانہ کے 14000 سے زائد عازمین کو انتخاب سے محرومی کا خدشہ
حیدرآباد ۔ 16 ۔ مارچ (سیاست نیوز) آندھراپردیش کی تقسیم کے سبب حج کوٹہ میں تلنگانہ کے ساتھ کمی کے باعث 14,000 سے زائد عازمین حج کو جاریہ سال حج کی سعادت حاصل نہیں ہوگی۔ سنٹرل حج کمیٹی نے تلنگانہ اور آندھراپردیش کے لئے حج کوٹہ کا اعلان کردیا ہے۔ دونوں ریاستوں میں مسلمانوں کی آبادی کے لحاظ سے کوٹہ مقرر کیا گیا۔ تلنگانہ کیلئے 2760 کا کوٹہ الاٹ ہوا ہے جس میں 139 کا لمحہ آخر میں اضافہ کیا گیا جبکہ آندھراپردیش کیلئے 2245 کا کوٹہ مقرر کیا گیا جس میں 113 دیگر ریاستوں سے مابقی کوٹہ سے دیا گیا حصہ ہے ۔ اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور کو سنٹرل حج کمیٹی نے آج دونوں ریاستوں کے کوٹہ سے واقف کرایا ۔ گزشتہ سال متحدہ آندھراپردیش میں 5580 کا کوٹہ الاٹ کیا گیا تھا جبکہ ویٹنگ لیسٹ کے بعد 6043 عازمین حج بیت اللہ کے لئے روانہ ہوئے تھے۔ ریاست کی تقسیم کے سبب اسی کوٹہ کو دونوں ریاستوں میں تقسیم کردیا گیا ہے۔ گزشتہ سال سنٹرل حج کمیٹی نے ایک لاکھ 5,000 کے اپنے کوٹہ کو سارے ملک میں تقسیم کیا تھا۔ اس مرتبہ 94,000 کو ملک کی تمام ریاستوں میں تقسیم کیا گیا ۔ تلنگانہ میں مسلم آبادی 38 لاکھ 53 ہزار 213 ہے۔ اس اعتبار سے 2760 کا کوٹہ الاٹ ہوا۔ اس سے 14210 عازمین قرعہ اندازی میں انتخاب سے محروم ہوجائیں گے۔ آندھراپردیش میں مسلم آبادی 21 لاکھ 33 ہزار 643 ہے۔ اس اعتبار سے 2245 کا کوٹہ مقرر کیا گیا۔ وہاں 1595 افراد قرعہ اندازی میں انتخاب سے محروم رہیں گے۔ مردم شماری 2001 ء کے مطابق مسلم آبادی کا تعین کیا جارہا ہے۔ جبکہ سنٹرل حج کمیٹی سے نمائندگی کی گئی تھی کہ 2011 ء مردم شماری کے تحت کوٹہ الاٹ کیا جائے ۔ متحدہ آندھراپردیش کے کوٹہ کو تلنگانہ میں 55 فیصد اور آندھراپردیش میں 45 فیصد کے حساب سے تقسیم کر دیا گیا۔ دونوں ریاستوں میں مجموعی طور پر 5005 عازمین کا کوٹہ ا لاٹ ہوا ہے جبکہ گزشتہ یہ 5580 تھا۔ تلنگانہ میں محفوظ زمرہ کے تحت منتخب عازمین کی تعداد 1137 ہے جن کے لئے قرعہ اندازی نہیں ہوگی۔ اس طرح تلنگانہ میں صرف 1623 عازمین کے انتخاب کے لئے قرعہ اندازی ہوگی، جس کے سبب ہزاروں افراد انتخاب سے محروم ہوسکتے ہیں جبکہ آندھراپردیش میں محفوظ زمرہ کے تحت صرف 222 عازمین کا انتخاب قرعہ اندازی کے بغیر ہوچکا ہے۔ لہذا 2023 عازمین کیلئے قرعہ اندازی ہوگی۔ توقع ہے کہ لمحہ آخر میں ویٹنگ لسٹ کے تحت کچھ زائد نشستیں دونوں ریاستوں کو الاٹ ہوسکتی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT