Wednesday , September 19 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ و آندھرا کے عازمین کیلئے 17 خادم الحجاج کا انتخاب

تلنگانہ و آندھرا کے عازمین کیلئے 17 خادم الحجاج کا انتخاب

حیدرآباد۔/12مئی، ( سیاست نیوز) تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے حجاج کرام کی خدمت کیلئے 14خادم الحجاج کا انتخاب عمل میں آیا۔ حج 2015 کے ضمن میں آج دفتر حج کمیٹی میں خادم الحجاج کے انتخاب کیلئے قرعہ اندازی کی گئی جس میں تلنگانہ اور آندھرا پردیش کو 4 زمروں میں تقسیم کرتے ہوئے جملہ 14 خادم الحجاج منتخب کئے گئے۔ ان کے علاوہ حج کمیٹی اور وقف بورڈ سے

حیدرآباد۔/12مئی، ( سیاست نیوز) تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے حجاج کرام کی خدمت کیلئے 14خادم الحجاج کا انتخاب عمل میں آیا۔ حج 2015 کے ضمن میں آج دفتر حج کمیٹی میں خادم الحجاج کے انتخاب کیلئے قرعہ اندازی کی گئی جس میں تلنگانہ اور آندھرا پردیش کو 4 زمروں میں تقسیم کرتے ہوئے جملہ 14 خادم الحجاج منتخب کئے گئے۔ ان کے علاوہ حج کمیٹی اور وقف بورڈ سے 3ملازمین خادم الحجاج کے طور پر روانہ کئے جائیں گے۔ اس طرح مجموعی طور پر 17 خادم الحجاج کو روانہ کیا جائے گا۔ اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود آندھرا پردیش جناب شیخ محمد اقبال، ڈائرکٹر اقلیتی بہبود تلنگانہ جناب جلال الدین اکبر اور اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے قرعہ اندازی انجام دی۔ دونوں ریاستوں سے ویٹنگ لسٹ کے بشمول جملہ 5209 عازمین حج منتخب ہوئے ہیں اور 300عازمین کیلئے ایک خادم الحجاج کے حساب سے 17 خادم الحجاج کا قرعہ اندازی کے ذریعہ انتخاب عمل میں آیا۔ آندھرا علاقہ کے 1000 عازمین حج کیلئے خادم الحجاج کی 6درخواستیں وصول ہوئی تھیں جن میں سے تین کا انتخاب کیا گیا جبکہ ویٹنگ لسٹ میں ایک کو رکھا گیا۔ تلنگانہ ریجن کے 1171 عازمین کیلئے خادم الحجاج کی 42درخواستیں وصول ہوئی تھیں جن میں سے 4کا انتخاب کیا گیا جبکہ ایک ویٹنگ لسٹ میں ہے۔ رائلسیما کے 1334 عازمین کیلئے خادم الحجاج کی 20درخواستیں وصول ہوئی تھیں جن میں سے 4کا انتخاب عمل میں آیا اور ویٹنگ لسٹ میں ایک کو رکھا گیا۔ دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد کے 1704عازمین کیلئے خادم الحجاج کی 74درخواستیں وصول ہوئیں جن میں سے 3کا انتخاب کیا گیا جبکہ ایک کو ویٹنگ لسٹ میں رکھا گیا۔ حج کمیٹی اور وقف بورڈ کے منتخب کردہ 3 خادم الحجاج دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد کے عازمین کی خدمت کیلئے مامور ہوں گے۔ خادم الحجاج کیلئے جملہ 142 درخواستیں اہل قرار پائیں۔ قرعہ اندازی کے بعد دونوں حکومتوں اور حج کمیٹی نے واضح کردیا کہ خادم الحجاج کی جانب سے خدمت میں کسی بھی کوتاہی کی شکایت پر تادیبی کارروائی کی جائے گی اور ان سے سفر حج کی رقم وصول کی جائے گی۔ شیخ محمد اقبال نے کہا کہ خادم الحجاج کی ذمہ داری ہے کہ وہ عازمین حج کی بہتر سے بہتر خدمت کریں انہیں نہ صرف مفت سفر کے علاوہ قیام و طعام کی سہولت فراہم کی جاتی ہے بلکہ دیگر عازمین کی طرح فی کس 1500 ریال دیئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ خادم الحجاج کو اپنی بہتر کارکردگی کے ذریعہ حکومتوں کا نام روشن کرنا چاہیئے۔ انہوں نے بتایا کہ سابق میں خادم الحجاج کے بارے میں کئی شکایات مل چکی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ویٹنگ لسٹ کے تحت تلنگانہ میں 109اور آندھرا پردیش میں 89عازمین کا انتخاب ہوا۔ انہوں نے بتایا کہ سعودی ایر لائنز کی پروازوں کی بحالی کے سلسلہ میں مرکز سے نمائندگی کی جارہی ہے۔ شیخ محمد اقبال کے مطابق آندھرا پردیش حکومت جلد ہی حج کمیٹی تشکیل دے گی۔ جناب جلال الدین اکبر نے منتخب خادم الحجاج کو مبارکباد پیش کی اور کہا کہ وہ خوش قسمت ہیں کہ انہیں اللہ کے مہمانوں کی خدمت کا موقع فراہم ہوا ہے۔ انہوں نے خادم الحجاج کو مشورہ دیا کہ وہ اپنے تجربات کی بنیاد پر واپسی کے وقت حج کمیٹی کو مزید بہتر انتظامات کے سلسلہ میں تجاویز پیش کریں۔ اسپیشل آفیسر پروفیسر ایس اے شکور نے کہا کہ اکثر حجاج کرام خادم الحجاج کی عدم دستیابی کی شکایت کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مناسب انداز میں خدمت انجام نہ دینے پر متعلقہ محکمہ جات کو کارروائی کی سفارش کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT