Friday , September 21 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کے قیام کے باوجود آندھرا پردیش حکومت کی رکاوٹیں

تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کے قیام کے باوجود آندھرا پردیش حکومت کی رکاوٹیں

کمیشن کی کارکردگی متاثر ، تلنگانہ کے ملازمین آندھرا پردیش کمیشن کے لیے کام کرنے پر مجبور

کمیشن کی کارکردگی متاثر ، تلنگانہ کے ملازمین آندھرا پردیش کمیشن کے لیے کام کرنے پر مجبور
حیدرآباد۔/8جنوری، ( سیاست نیوز) تلنگانہ میں علحدہ پبلک سرویس کمیشن کے قیام کے باوجود آندھرا پردیش حکومت کی رکاوٹوں کے سبب کمیشن کی کارکردگی متاثر ہورہی ہے۔ تلنگانہ حکومت نے ریاست کی ایک لاکھ سے زائد مخلوعہ جائیدادوں پر مرحلہ وار انداز میں تقررات کا عمل شروع کرنے کا فیصلہ کیا لیکن ملازمین کے الاٹمنٹ کے مسئلہ پر آندھرا پردیش کی جانب سے رکاوٹیں کھڑی کی جارہی ہیں۔ آندھرا پردیش تنظیم جدید بل 2014 کے تحت علحدہ تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن قائم کیا گیا جس کیلئے حکومت نے 121 ملازمین کو الاٹ کرتے ہوئے احکامات جاری کئے۔ تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن نے آندھرا پردیش پبلک سرویس کمیشن سے خواہش کی کہ اس کے ملازمین کو ریلیو کرتے ہوئے تلنگانہ میں کام کرنے کی اجازت دی جائے لیکن بتایا جاتا ہے کہ آندھرا پردیش پبلک سرویس کمیشن اس مکتوب پر کسی بھی کارروائی سے گریز کررہا ہے۔ تلنگانہ کے ملازمین کو ریلیو کرنے کے بجائے انہیں آندھرا پردیش کمیشن کیلئے کام کرنے پر مجبور کیا جارہا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ تلنگانہ کے ملازمین نے اس سلسلہ میں آندھرا پردیش پبلک سرویس کمیشن کے انچارج سکریٹری ڈی رما دیوی سے نمائندگی کی جو بے فیض ثابت ہوئی۔ کسی بھی ادارہ کی تقسیم کے بعد ملازمین کی تقسیم ضروری ہے لیکن تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کو ملازمین کی فراہمی سے انکار کیا جارہا ہے۔ نوقائم شدہ کمیشن کا کہنا ہے کہ درکار اسٹاف کے بغیر تقررات کا عمل شروع نہیں کیا جاسکتا۔ تلنگانہ حکومت بے روزگار نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی میں دلچسپی رکھتی ہے لیکن آندھرا پردیش حکومت ہر مسئلہ کو سیاسی رنگ دیتے ہوئے رکاوٹیں کھڑی کررہی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ آندھرا پردیش کے عہدیداروں کو تلنگانہ کمیشن کے علحدہ آفس کے قیام پر بھی اعتراض ہے۔ پبلک سرویس کمیشن کی تقسیم سے متعلق فائیل گورنر کی منظوری کیلئے راج بھون روانہ کی گئی۔ توقع ہے کہ بہت جلد گورنر اسے منظوری دے دیں گے۔ اسی دوران پبلک سرویس کمیشن کے امتحانات کے سلسلہ میں نصاب کی تیاری کیلئے تشکیل دی گئی 25رکنی کمیٹی کا پہلا اجلاس آج منعقد ہوا جس میں نصاب کی تیاری کے ابتدائی اُمور کا جائزہ لیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT