Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ پردیش کانگریس میں تبدیلی پر غور

تلنگانہ پردیش کانگریس میں تبدیلی پر غور

پنالہ لکشمیا اور جانا ریڈی کی دہلی طلبی، دیگر قائدین بھی دوڑ میں شامل

پنالہ لکشمیا اور جانا ریڈی کی دہلی طلبی، دیگر قائدین بھی دوڑ میں شامل
حیدرآباد /5 اگست (سیاست نیوز) تلنگانہ میں کانگریس کی شکست کے بعد صدر پردیش کانگریس کے عہدہ پر پنالہ لکشمیا کی برقراری پر سوالیہ نشان لگ رہا ہے اور تبدیلی کی افواہیں بہت تیزی سے پھیل رہی ہیں۔ کئی قائدین دعویدار بن کر ابھر رہے ہیں، جب کہ ہائی کمان کی طلبی پر صدر پردیش کانگریس دہلی پہنچ چکے ہیں۔ واضح رہے کہ کانگریس نے علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل دی، اس کے باوجود تلنگانہ میں پارٹی کی شکست پر کانگریس ہائی کمان سخت ناراض ہے۔ قومی سطح پر پارٹی میں بڑے پیمانے پر تبدیلیوں کا جائزہ لینے والی ہائی کمان تلنگانہ پردیش کانگریس کا بھی جائزہ لے رہی ہے۔ اس سلسلے میں سابق ڈپٹی اسپیکر ملو بٹی وکرامارک، سابق ارکان پارلیمنٹ جی ویویک، ملو روی، پونم پربھاکر اور دیگر قائدین دوڑ دھوپ جاری رکھے ہوئے ہیں اور سینئر قائدین سے ملاقات کرکے ان سے اپنے لئے سفارش کروا رہے ہیں۔ تلنگانہ کے کئی قائدین پنالہ لکشمیا کی تائید و مخالفت کر رہے ہیں۔ ان کے تائیدی قائدین کا کہنا ہے کہ انتخابات سے عین قبل انھیں صدر بنایا گیا، جس کی وجہ سے انھیں اپنی صلاحیت منوانے کا موقع نہیں مل سکا، لہذا انھیں صدارت پر برقرار رکھا جائے۔ قبل ازیں پنالہ لکشمیا نے اضلاع کانگریس کمیٹیوں کا اجلاس طلب کرکے پارٹی کی شکست کی وجوہات کا جائزہ لیا تھا، جس کی رپورٹ وہ ہائی کمان کو پیش کریں گے۔ ذرائع کے بموجب صدات کی دوڑ میں دو سابق خاتون وزراء ڈی کے ارونا اور ڈاکٹر جے گیتا ریڈی بھی شامل ہیں۔ امید کی جا رہی ہے کہ قائد اپوزیشن کے جانا ریڈی بھی 6 اگست کو دہلی روانہ ہو جائیں گے، جن سے پردیش کانگریس کی صدارت کے لئے رائے طلب کرنے کا امکان ہے۔

TOPPOPULARRECENT