Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کانگریس کا مشن 2019 کا نشانہ ، انتخابی تیاریوں کا آغاز

تلنگانہ کانگریس کا مشن 2019 کا نشانہ ، انتخابی تیاریوں کا آغاز

ایک سال قبل امیدواروں کے اعلان کا فیصلہ ، عہدیداروں کو ذمہ داریاں ، ملو روی
حیدرآباد ۔ 18 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے مشن 2019 کا نشانہ مختص کرتے ہوئے انتخابی تیاریوں کا آغاز کردیا ہے ۔ ایک سال قبل امیدواروں کا اعلان کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ نائب صدور اور جنرل سکریٹریز کو اضلاع انچارجس کی ذمہ داریاں سونپتے ہوئے کام کا آغاز کردیا گیا ہے جون کے اواخر تک منڈل کمیٹیاں تشکیل دینے اور بوتھ سطح سے تربیتی کیمپس کا آغاز کرنے کی بھی ہدایت دی گئی ہے ۔ آج گاندھی بھون میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے نائب صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی ڈاکٹر ملو روی نے یہ بات بتائی ۔ اس موقع پر جنرل سکریٹریز مسٹر مہیش کمار گوڑ اور مسٹر ڈی شرون بھی موجود تھے ۔ انہوں نے تلنگانہ پردیش کانگریس عاملہ اور تلنگانہ رابطہ کمیٹی کے اجلاسوں میں لیے گئے فیصلوں سے واقف کراتے ہوئے کہا کہ دیہی سطح سے کانگریس پارٹی کو مستحکم کرنے کے لیے ہر ضلع میں ایک نائب صدر اور تین جنرل سکریٹریز کو انچارجس نامزد کیا گیا ہے ۔ تمام انچارجس کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ اپنے اپنے اضلاع کا دورہ کرتے ہوئے پارٹی قائدین اور کارکنوں سے ملاقاتیں کرتے ہوئے ماہ جون تک منڈل سطح کی کمیٹیاں تشکیل دینے کی ہدایت دی گئی ہے ۔ ساتھ ہی دیہی سطح سے ریاستی سطح تک پارٹی کیڈر کو تازہ سیاسی صورتحال اور دوسرے مسائل پر تربیتی کلاسیس کا اہتمام کرنے پر زور دیا گیا ہے ۔ ہر اسمبلی حلقہ سے کم از کم 30 پارٹی کارکنوں کو تربیت فراہم کرنے کی ہدایت دی گئی ہے ۔ کسی ایک دن 3600 پارٹی کارکنوں کا تربیتی اجلاس منظم کرتے ہوئے کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی کے سیاسی مشیر پرشانت کشور سے بھی ملاقات کرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ کام کرنے والے قائدین کو پارٹی میں اہمیت دی جائے گی ۔ انتخابات سے ایک سال قبل 60 اسمبلی حلقہ جات پر پارٹی امیدواروں کا اعلان کیا جائے گا ۔ مخالف پارٹی سرگرمیوں میں ملوث ہونے والے قائدین کے خلاف سخت تادیبی کارروائی کی جائے گی ۔ ٹی آر ایس حکومت کی مخالف عوام دشمن پالیسیوں کے خلاف کانگریس پارٹی آر پار کی لڑائی لڑے گی اپنی تحریک میں مزید شدت پیدا کرنے کے لیے پارٹی کے قومی قائد سرینواس سے تجاویز حاصل کی جائے گی۔ نمستے تلنگانہ اور ٹی نیوز ٹی آر ایس کے پمفلٹ کی طرح کام کررہا ہے ۔ لہذا کانگریس پارٹی نے اس کا بائیکاٹ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT