Saturday , December 16 2017
Home / اضلاع کی خبریں / تلنگانہ کو سرسبز و شاداب بنانے آبپاشی پراجکٹس کی تعمیر

تلنگانہ کو سرسبز و شاداب بنانے آبپاشی پراجکٹس کی تعمیر

ضلع سدی پیٹ میں کالیشورم پراجکٹ کے کاموں کا معائنہ، ریاستی وزراء پوچارم سرینواس اور ٹی ہریش راؤ کا بیان
نظام آباد:9؍ مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز )ریاست کو سرسبزو شاداب بنانے کی غرض سے ہی چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر رائو ریاست گیر سطح پر پراجیکٹس کی تعمیر عمل میں لارہے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار ریاستی وزیر زراعت پوچارام سرینواس ریڈی نے کیا، انہوں نے سدی پیٹ ضلع کے کالیشور م میں تعمیر کئے جانے والے مشن بھگیرتا کے کاموں کا وزیر آبپاشی ہریش رائو ، ارکان پارلیمنٹ بی بی پاٹل ، پربھاکر ریڈی ، ضلع پریشد چیرمین دفعدار راجو ، ارکان اسمبلی ہنمنت شنڈے ، رام لنگا ریڈی ، ایم ایل سی وی جی گوڑ ، کسان اور قائدین کے ہمراہ کاموں کا جائزہ لیا ۔ اس موقع پر مسٹر پوچارام سرینواس ریڈی نے بتایا کہ ریاست میں ایک کروڑ ایکر اراضی کو پانی سیراب کرنے کیلئے کالیشور پراجیکٹ کی تعمیر عمل میں لارہے ہیں اور ایک لاکھ 50 ہزار کروڑ روپئے سے کالیشور م پراجیکٹ کی تعمیر عمل میں لائی جارہی ہے تلنگانہ کے حصول سے کیا فائدہ حاصل ہونے والا ہے کہہ کر تنقید کرنے والے افراد کو کالیشورم ایک مثال ہے ۔ کانگریس کے دور میں تعمیر کئے جانے والے پراجیکٹس کے تعمیر ی کام انتہائی سست رفتار سے انجام دے رہے تھے جبکہ چیف منسٹر چندر شیکھر رائو ، وزیر آبپاشی ہریش رائو کی دلچسپی سے کام تیزی کے ساتھ جاری ہے ۔ میڈ مائنر سے ملنا ساگر تک 33 کلو میٹر سرنگ کے کام 90 فیصد مکمل کئے گئے ہیں ہر روز 11 ہزار کیوزکس لیٹر پانی سرنگ کے ذریعہ منتقل کیا جائیگا ملنا ساگر سے گراویٹی کے ذریعہ ہلدی کنال کو منتقل کیا جائیگا اور یہاں سے نظام ساگر کو منتقل کیا جائے گا گوداوری کا پانی نظام آباد ، کاماریڈی ضلع کے 6.50لاکھ کو پانی سیراب کیا جائیگا چیف منسٹر مسٹر چندر شیکھر رائو کسانوں کی ترقی کیلئے کوشاں ہے اور پراجیکٹوں کے پانی سے تالابوں کو منتقل کی وجہ سے زیر زمین سطح آب میں اضافہ ہوگا ریاست میں ہونے والی کسانوں کی خودکشی کی امواتوں کی ذمہ دار سابق حکومت ہے پراجیکٹوں کی تعمیر کی تاخیر کی وجہ سے خودکشی کی امواتیں ہورہی ہے اور پراجیکٹس کے تعمیری کام کو روکنے کیلئے عدالتوں سے حکم التواء حاصل کررہے ہیں ۔ حکومت کی جانب سے انجام دئیے جانے والے کاموں کا جائزہ لیتے ہوئے اپوزیشن پارٹیاں تعاون کریں تو بہتر ہوگا اگر پراجیکٹوں کو روکنے کی کوشش کی گئی تو حکومت خاموش تماشائی بنے رہے گی ۔ ریاست کو سرسبز و شاداب سنہرا تلنگانہ بنانے کیلئے ہی حکومت پراجیکٹوں کی تعمیر عمل میں لائی جارہی ہے اور آنے والے دنوں میں ریاست کے کسانوں کے آبی مسائل حل ہوں گے ۔ ہریش رائو وزیر آبپاشی نے پائور پراجیکٹ کے ذریعہ نظام آباد ضلع کے عوامی نمائندوں کو تفصیلات سے واقف کراتے ہوئے کہا کہ سدی پیٹ ضلع کے وینکٹا پور حدود میں کالیشور پراجیکٹ کی تعمیر عمل میں لائی جارہی ہے مہاراشٹرا سے معاہدہ کرتے ہوئے گوداوری کے پانی کو تلنگانہ پہنچایا جائیگا تمڈی ہٹی کے مقام کو تبدیل کرتے ہوئے میڈی گڈہ پر بیاریج تعمیر کرتے ہوئے انارام ، سدیلا مقامات پر بیاریج تعمیر اور گوداوری کے 35ٹی ایم سی پانی کو تین بیاریجوں کے ذریعہ منتقل کیا جارہا ہے ۔ ری ڈیزائنگ کیا گیا ۔ 200 ٹی ایم سی پانی کو 18لاکھ ایکر کو سیراب کے علاوہ ایس آر ایس پی ، ایل ایم ڈی ، سنگور میں پانی بھرتے ہوئے جملہ 36لاکھ ایکر اراضی کو پانی سیراب کیا جائیگا ۔ ملنا ساگر پراجیکٹ سے گندوملا ، بسوا پور ریزرویر کے ذریعہ فلورائیڈ سے متاثرہ بھونگیر، آلیر ، تنگا ترتی ، نکیریکل مقامات کو گوداوری کا پانی فراہم کئے جانے والے منصوبہ کو میاپ کے ذریعہ واقف کروایا ۔ سدی پیٹ ضلع کے کنڈہ پوچماساگر کے ذریعہ گوداوری کے پانی کو گراویٹی کے ذریعہ شامر پیٹ تالاب بھرا جائیگا۔ ملنا ساگر سے ہلدی تالاب ، ہلدی تالاب سے مانجرا کے ذریعہ نظام ساگر کو پانی منتقل کیا جائیگا۔

TOPPOPULARRECENT