Thursday , June 21 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کو 1500 میگاواٹ برقی فراہمی کا مطالبہ

تلنگانہ کو 1500 میگاواٹ برقی فراہمی کا مطالبہ

بحران پر قابو پانے مرکز سے تعاون درکار ، وزیر فینانس ای راجندر کا بیان

بحران پر قابو پانے مرکز سے تعاون درکار ، وزیر فینانس ای راجندر کا بیان
حیدرآباد۔/26اگسٹ، ( سیاست نیوز) وزیر فینانس ای راجندر نے مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ تلنگانہ میں برقی بحران کے مسئلہ کے حل کیلئے تعاون کرے۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے وزیر فینانس نے کہا کہ برقی بحران سے نمٹنے کیلئے مرکز کو مزید 1500میگا واٹ برقی فراہم کرنی چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ ریاست فی الوقت سنگین برقی بحران کی صورتحال سے گزررہی ہے اور مرکز کی ذمہ داری ہے کہ وہ زائد برقی کی سربراہی کے ذریعہ تلنگانہ کو اس بحران سے نکلنے میں مدد کرے۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کو چاہیئے کہ وہ آندھرا اور تلنگانہ دونوں ریاستوں کی ضرورتوں کی تکمیل کا خیال کرے۔ ای راجندر نے کہا کہ حکومت بہت جلد صنعتی پالیسی کا اعلان کرے گی جس میں سرمایہ کاروں کیلئے مختلف ترغیبات اور مراعات کا اعلان کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ صنعتوں اور سرمایہ کاروں کو موجودہ برقی بحران کے سلسلہ میں فکر مند ہونے کی ضرورت نہیں کیونکہ آئندہ تین برسوں میں تلنگانہ برقی کے شعبوں میں خود مکتفی ہوجائے گا۔ انہوں نے موجودہ برقی بحران کیلئے سابقہ حکومت کی پالیسیوں کو ذمہ دار قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پڑوسی ریاست چھتیس گڑھ سے برقی کی خریدی کیلئے بات چیت کررہی ہے۔ اس کے علاوہ تلنگانہ میں نئے برقی پراجکٹس کا قیام حکومت کے زیر غور ہے۔ انہوں نے یقین ظاہر کیا کہ آئندہ تین برسوں میں تلنگانہ نہ صرف برقی شعبہ میں خود مکتفی ہوجائے گا بلکہ زرعی، صنعتی اور گھریلو شعبہ جات کو بلا وقفہ برقی کی سربراہ کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ زرعی شعبہ کو مناسب برقی کی سربراہی کے ذریعہ فصلوں کے نقصان کو بچانے کیلئے ہنگامی منصوبہ تیار کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کسانوں کو یقین دلایا کہ حکومت ان کے مفادات کا تحفظ کرے گی لہذا انہیں احتجاج کا راستہ اختیار کرنے کی ضرورت نہیں۔

TOPPOPULARRECENT