Monday , September 24 2018
Home / اضلاع کی خبریں / تلنگانہ کیلئے جان نچھاور کرنے والے ’’امر شہید‘‘

تلنگانہ کیلئے جان نچھاور کرنے والے ’’امر شہید‘‘

نظام آباد:3؍ جون ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) وائس چانسلر تلنگانہ یونیورسٹی پروفیسر محمد اکبر علی خان نے ملک کی 29 ویں ریاست تلنگانہ کے قیام پر تلنگانہ کی عوام دلی مبارکباد پیش کی ۔ نئی ریاست کی ترقی و خوشحالی کیلئے اپنی نیک تمنائوں کا اظہار کیا ۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار ایڈمنسٹریشن بلڈنگ تلنگانہ یونیورسٹی میں ہندوستانی پرچم کشائی کے م

نظام آباد:3؍ جون ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) وائس چانسلر تلنگانہ یونیورسٹی پروفیسر محمد اکبر علی خان نے ملک کی 29 ویں ریاست تلنگانہ کے قیام پر تلنگانہ کی عوام دلی مبارکباد پیش کی ۔ نئی ریاست کی ترقی و خوشحالی کیلئے اپنی نیک تمنائوں کا اظہار کیا ۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار ایڈمنسٹریشن بلڈنگ تلنگانہ یونیورسٹی میں ہندوستانی پرچم کشائی کے موقع پر اپنے خصوصی خطاب میں کیا۔ اس تقریب کے موقع پر رجسٹرار تلنگانہ یونیورسٹی پروفیسر آر لمبادری ، پرنسپل یونیورسٹی کالج پروفیسر پی کنکیا ، ڈین فیکلٹی آف آرٹس پروفیسر دھرم راج و دیگر پروفیسرس و یونیورسٹی عملہ موجود تھا۔ وائس چانسلر اکبر علی خان اپنی تقریر جاریرکھتے ہوئے علیحدہ ریاست تلنگانہ کیلئے گذشتہ تقریباً60 برسوں سے چلائی گئی تحریک و جدوجہد پر روشنی ڈالی ۔ انہوں نے اس تحریک میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینے والے مجاہدین اور اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والے شہیدان کو زبردست خراج عقیدت پیش کیا اور کہا کہ آج حقیقت میںتبدیل ہونے والی تلنگانہ ریاست کے موقع پر وہ لوگ تو نہیں ہے لیکن ان مجاہد ین کی علیحدہ ریاست کے قیام کیلئے دی جانے والی قربانیوں کو ہمیشہ یاد رکھا جائیگا۔ ان کی یہ قربانیاں ریاست تلنگانہ کیلئے ناقابل فراموش ہے ۔ ان ہی کی جدوجہد کی وجہ سے آج ریاست تلنگانہ کا خواب شرمندہ تعمیر ہوگیا ہے پروفیسر اکبر علی خان اپنی تقریر میں مزید کہا کہ آج کا سورج تلنگانہ ریاست میں طلو ع ہوا ہے اور اب ریاست کی تشکیل نو اور سنہرے تلنگانہ کیلئے ایک اور جدوجہد کی ضرورت ہے یہ جدوجہد ریاست تلنگانہ کی بے مثال ترقی اور تلنگانہ عوام کو ان کے خوابوں کی تعبیر کیلئے ہونی چاہئے ۔اور اس کیلئے ہر شعبہ حیات سے تعلق رکھنے دانشوار حضرات کے ساتھ ساتھ عوام کو تعاون نہایت ہی ناگزیر ہے وائس چانسلر تلنگانہ یونیورسٹی نے یونیورسٹی سے تعلق رکھنے والے اساتذہ کرام و دیگر عملہ پرزور دیا کہ وہ اپنی اپنی صلاحیتوں کو بروے کار لاتے ہوئے نئی ریاست تلنگانہ کی خوشحالی و ترقی کیلئے اپنا اپنا کردار ادا کرے ساتھ ہی یونیورسٹی میں ڈسپلین کے ساتھ معیاری تعلیم کے فروغ اور طلبہ میں کردار سازی کیلئے اپنا اپنا حصہ ادا کریں۔ پروفیسر اکبر علی خان اس موقع پر طلبہ پر زور دیا کہ وہ وقت کا صحیح استعمال کرتے ہوئے حصو ل تعلیم کے ساتھ ساتھ اپنی چھپی ہوئی صلاحیتون کو اجاگر کریں کیونکہ جب تک نوجوان طبقہ بالخصوص تعلیم یافتہ طبقہ اس ریاست کی تشکیل نو اور تیز رفتار ترقی کیلئے آگے نہیں آئے گا ریاست کی خوشحالی و ترقی میںتیزی ممکن نہیں ۔ انہوں نے ملک کی 29 ویں ریاست تلنگانہ کی خوشحالی و ترقی کیلئے اپنی نیک توقعات کا اظہار کیا۔ بعدازاں سمینار ہال یونیورسٹی کالج میں ہفتہ جشن تلنگانہ کے ضمن میں ایک تقریب رکھی گئی جس میں مہمان خصوصی کی حیثیت سے وائس چانسلر پروفیسر محمد اکبر علی خان ، مہمان اعزازی کی حیثیت سے رجسٹرار پروفیسر آر لمبادری کے علاوہ دیگر مہمانان میں ڈاکٹر آڈیٹ سیل پروفیسر دھرم راج ، جوائنٹ ایکشن کمیٹی ضلع نظام آباد مسٹر گوپال شرما ، سینئر رپورٹر روزنامہ دی ہندو مسٹر رام موہن کے علاوہ پرنسپل یونیورسٹی کالج پروفیسر پی کنکیا اور ڈاکٹر بی ایس مورتی نے شرکت کی اور اپنے خطاب نئی تشکیل شدہ ملک کی 29 ویں ریاست تلنگانہ کے قیام کی عوام کو مبارکباد دی اور اپنے تقاریر میں علاقہ تلنگانہ کے آندھرا میں انضمام سے لیکر علیحدہ ریاست تلنگانہ کیلئے چلائی گئی تحریک پر روشنی ڈالی۔

TOPPOPULARRECENT