Monday , November 20 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کی ترقی میں چندرا بابو رکاوٹ ، ایجنٹس کا استعمال

تلنگانہ کی ترقی میں چندرا بابو رکاوٹ ، ایجنٹس کا استعمال


ٹی آر ایس حکومت کے خلاف مہم ، وزیر مصنوعات جوپلی کرشنا راؤ کا الزام
حیدرآباد ۔ 20 ۔ اگست (سیاست  نیوز) وزیر بھاری مصنوعات جوپلی کرشنا راؤ نے الزام عائد کیا کہ چیف منسٹر آندھراپردیش چندرا بابو نائیڈو تلنگانہ کی ترقی میں رکاوٹ پیدا کرنے کیلئے اپنے ایجنٹس کا استعمال کر رہے ہیں۔ تلنگانہ سے تعلق رکھنے والے تلگو دیشم قائدین کو ٹی آر ایس حکومت کے خلاف مہم کیلئے میدان میں چھوڑدیا گیا ہے۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے جوپلی کرشنا راؤ نے کہا کہ جس طرح چندرا بابو نائیڈو تلنگانہ کیلئے بڑی نحوست تھے، اسی طرح رکن اسمبلی ریونت ریڈی تلنگانہ کیلئے چھوٹی نحوست ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چندرا بابو نائیڈو کے اشارہ پر ریونت ریڈی ٹی آر ایس حکومت کے خلاف الزام تراشی کر رہے ہیں اور بے بنیاد الزامات کے ذریعہ عوام میں الجھن پیدا کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ کرشنا راؤ نے محبوب نگر کے کوڑنگل اسمبلی حلقہ میں ترقیاتی کاموں کے افتتاح کے موقع پر ریونت ریڈی کی غیر حاضری پر نکتہ چینی کی اور کہا کہ وزیر کی حیثیت سے انہوں نے ایک گھنٹہ سے زائد تک ریونت ریڈی کا انتظار کیا لیکن وہ تقریب میں حاضر نہیں ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ تحریک کے دوران جب عوام نے اپنی جانوں کی قربانی دی ، اس وقت ریونت ریڈی خاموش رہے لیکن آج شہیدان  تلنگانہ سے ہمدردی کا اظہار کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ کے عوام ریونت ریڈی اور تلگو دیشم کے دیگر قائدین کی اصلیت سے اچھی طرح واقف ہیں اور وہ بہکاوے میں آنے والے نہیں۔ وزیر صنعت نے کہا کہ تلنگانہ کے پراجکٹ کے خلاف جب چندرا بابو نائیڈو نے مرکز کو مکتوب روانہ کیا تو ریونت ریڈی نے اس کی تردید کی لیکن بعد میں حقیقت منظر عام پر آگئی کہ چندرا بابو نائیڈو نے ایک سے زائد مرتبہ تلنگانہ کے پراجکٹس کے خلاف مرکز سے نمائندگی کی ہے۔ انہوںنے کہا کہ تلنگانہ حکومت شہری علاقوں کی طرح دیہی علاقوں کی ترقی کے اقدامات کر رہی ہے اور گرام جیوتی پروگرام کے تحت مواضعات میں کئی ترقیاتی کاموں کا آغاز کیا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT