Tuesday , September 25 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کی ترقی و تعمیر کیلئے سنگاپور کی تقلید

تلنگانہ کی ترقی و تعمیر کیلئے سنگاپور کی تقلید

بیرونی دورہ سے واپسی کے بعد چیف منسٹر کے سی آر کا اعلان

بیرونی دورہ سے واپسی کے بعد چیف منسٹر کے سی آر کا اعلان
حیدرآباد ۔ 25 ۔ اگست (سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے کہا کہ سنگا پور دورہ سے انہیں ریاست کی ترقی کے سلسلہ میں کئی انوکھے تجربات حاصل ہوئے ہیں اور وہ اپنے اس دورہ کے مشاہدات کی بنیاد پر تلنگانہ ریاست کی ترقی کی سمت اقدامات کریں گے۔ چیف منسٹر اعلیٰ سطحی وفد کے ساتھ اپنے پانچ روزہ دورہ سنگا پور کے بعد کل رات دیر گئے حیدرآباد واپس ہوئے۔ انہوں نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ وہ سنگا پور کی منصوبہ بند اور حمہ جہتی ترقی سے متاثر ہوئے ہیں۔ کے سی آر نے کہا کہ سنگا پور کے دورہ سے انہیں اس بات کا اندازہ ہوا کہ کم مواقع کے باوجود اس طرح ترقی حاصل کی جاسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ معاشی ترقی کے شعبہ میں جس طرح امریکہ نے ترقی کی ہے ، اسی طرح سنگا پور نے بھی مثال قائم کی ہے۔ سنگاپور کو کئی اہم اشیاء دیگر ممالک سے درآمد کرنی پڑتی ہے ، اس کے باوجود اس نے ترقی کے شعبہ میں دیگر ممالک نے نہ صرف مثال قائم کی بلکہ دنیا بھر کی توجہ کا مرکز بن گیا۔ انہوں نے بتایا کہ اراضی سے متعلق مسئلہ کو سنگا پور نے بہترین انداز میں حل کیا اور موجودہ اراضی کا ترقی کیلئے استعمال کیا گیا۔ کے سی آر نے کہا کہ سنگا پور کی ترقی نے حکومت کی پالیسیاں اور عوام کی شراکت میں اہم رول ادا کیا ہے۔ چیف منسٹر نے وزیر فینانس ای راجندر اور دیگر اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ سنگاپور اور کوالالمپور کا پانچ روزہ دورہ کیا اور رات دیر گئے حیدرآباد واپس ہوئے۔ ڈپٹی چیف منسٹرس ، ریاستی وزراء اور اعلیٰ عہدیداروں نے ایرپورٹ پر چیف منسٹر کا استقبال کیا ۔ اپنے دورہ کے دوران چیف منسٹر نے سنگاپور کے اعلیٰ عہدیداروں اور سرمایہ کاروں کے ساتھ علحدہ علحدہ اجلاس منعقد کرتے ہوئے ترقیاتی اقدامات میں حصہ داری کا جائزہ لیا۔ انہوں نے سرمایہ کاروں کو تلنگانہ میں سرمایہ کاری کی دعوت دی اور حکومت کی جانب سے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا ۔ حیدرآباد کو مثالی ریاست کی حیثیت سے ترقی دینے کے عزم کے ساتھ بین الاقوامی معیار کے پراجکٹ کا جائزہ لینے کیلئے چیف منسٹر نے اپنا پہلا بیرونی دورہ سنگا پور کا کیا۔ سنگا پور کے آئی آئی ایم اسٹوڈنٹس ایلومینی کی جانب سے چیف منسٹر کو سنگا پور کے دورہ کی دعوت دی گئی تھی ۔ انہوں نے سنگا پور میں امن و ضبط کی صورتحال سے نمٹنے کیلئے اقدامات، جرائم کی شرح میں کمی کیلئے شہر کی نگرانی، صنعتی ترقی ، شہری ترقی اور دیگر شعبوں کا جائزہ لیا۔ انہوں نے ملایشیا کے وزیراعظم اور حکومت کے دیگر ذمہ داروں سے بھی ملاقات کی اور تلنگانہ ریاست کی ترقی کے اپنے منصوبہ سے واقف کرایا ۔ بتایا جاتا ہے کہ سنگاپور کے حکام نے تلنگانہ کی ترقی میں ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا ہے۔ دورہ کے پہلے دن کے سی آر نے سنگاپور میں صنعتی ترقی کیلئے حکومت کی جانب سے دی جارہی مراعات کا جائزہ لیا جبکہ دوسرے دن آئی آئی ایم کی جانب سے منعقدہ پروگرام میں شرکت کی اور تلنگانہ حکومت کی جانب سے شروع کردہ فلاحی اسکیمات سے واقف کرایا ۔
چیف منسٹر نے سڑ ک کے راستہ کوالا لمپور تک کا راستہ طئے کرتے ہوئے اس راہداری میں صنعتی ترقی سے واقفیت حاصل کی ۔ ملایشیا کے وزیراعظم نجیب رزاق سے ملاقات کے دوران باہمی دلچسپی کے مسائل پر بات چیت کی گئی ۔ انہوں نے ملایشیا کی مونو ریل میں سفر کرتے ہوئے تیز رفتار ٹرینوں کے آغاز کے پراجکٹ کا جائزہ لیا۔ رات دیر گئے شمس آباد انٹرنیشنل ایرپورٹ پہنچنے پر ڈپٹی چیف منسٹرس ڈاکٹر ٹی راجیا ، محمود علی ، ریاستی وزراء کے ٹی راما راؤ ، این نرسمہا ریڈی ، چیف سکریٹری راجیو شرما اور ٹی آر ایس کے قائدین نے استقبال کیا ۔ اس دورہ میں چیف منسٹر کے ہمراہ وزیر فینانس ای راجندر ، ارکان اسمبلی ، ای رویندر ریڈی ، بی گنیش ، جیون ریڈی اور دوسرے شامل تھے۔

TOPPOPULARRECENT