Thursday , December 14 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کی ترقی کے لیے ویژن 2024 کی تیاری

تلنگانہ کی ترقی کے لیے ویژن 2024 کی تیاری

اعلیٰ سطحی اجلاس کے بعد 16 صفحات پر مشتمل کانسپٹ مختلف محکمہ جات کو روانہ
حیدرآباد ۔ 24 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : سنہرے تلنگانہ کے قیام کے لیے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ آئندہ سات برس کے لیے عملی اقدامات پر مشتمل پلان تیار کررہے ہیں ۔ 60 برس کے عرصہ میں علاقہ تلنگانہ کی ترقی نہیں ہوسکی اسی لیے 2024 تک ترقی کے معاملہ میں ریاست کو ملک کی دیگر ریاستوں کے مقابلہ سب سے آگے لیجانے کا فیصلہ کیا ہے ۔ اس مناسبت سے وزیر اعلیٰ نے بہترین ویزن تیار کرنے کے لیے اعلیٰ عہدیداران کو حکم دیا ہے اور اس ضمن میں تلنگانہ 2024 اول دس سالہ منصوبہ پر مشتمل ڈاکیومنٹ تیار کیا جارہا ہے ۔ علحدہ ریاست کے قیام کے بعد شروع کئے گئے ترقیاتی کاموں کا جائزہ لے کر ان اقدامات کو آگے بڑھاتے ہوئے دس سالہ منصوبہ تیار کیا جائے گا ۔ اس مناسبت سے حکومت کے مشیر اعلیٰ راجیو شرما کی صدارت میں منعقدہ اعلیٰ سطحی اجلاس کے بعد 16 صفحات پر مشتمل کانسپٹ تیار کر کے تمام محکمہ جات کو روانہ کیا گیا ہے اور اس کانسپٹ کے مطابق ویزن ڈاکیومنٹ تیار کیا جائے گا اس ڈاکیومنٹ کی تیاری کے لیے سرکاری 34 محکمہ جات کو 10 حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے ۔ جس میں ایک محکمہ عوامی فلاح و بہبود کو 50 کروڑ سے زائد بجٹ مختص کیا گیا ہے ۔ اس بجٹ میں جاریہ مالی سال میں 205 اسکیمات کے لیے 82792.46 کروڑ بجٹ کا تخمینہ منصوبہ تیار کیا جارہا ہے ۔ 2014 میں حکومت کے مقررہ منصوبہ جات اور ترقیاتی اسکیمات کی حالیہ رپورٹ کا موازنہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور گزشتہ تین سالہ ترقیاتی پروگرامس کی کامیابی کو مد نظر رکھتے ہوئے جائزہ اجلاس منعقد کئے جائیں گے اور ان ترقیاتی اسکیمات کا بغور جائزہ لیا جائیگا ۔ کمزوریوں اور خامیوں کی نشاندہی کرتے ہوئے مستقبل میں کئے جانے والے ترقیاتی اسکیمات و اقدامات کو تخمینہ لگا کر ہر ایک شعبہ کو 2024 تک ترقی دینے کا پلان تیار کیا جائیگا ۔ ویژن ڈاکیومنٹ کے پہلے حصہ میں حالیہ جاری پروگرامس کی حقیقی صورتحال کا جائزہ لیتے ہوئے آمدنی و خرچ کی تفصیلات پر مشتمل رپورٹ تیار کی جائے گی اور اس سے متعلق عوامی رائے حاصل کی جائے گی اور مختلف محکمہ جات سے ڈاٹا حاصل کیا جائے گا اور تمام سرکاری محکمہ جات کو 10 شعبہ جات میں تقسیم کیا جائے گا جو مندرجہ ذیل ہیں ۔ (1) زراعت اور اس سے متعلق شعبہ جات (2) ریونیو ( مالیہ ) (3) انتظامیہ (4) کمپنیز اور آئی ٹی شعبہ (5) بنیادی و اہم سہولیات (6) مقامی ترقیات (7) تعلیم (8) علاج و معالجہ (9) تجربہ / مہارت (10) فلاح و بہبود ۔ ان دس شعبہ کو ملا کر ایک کمیٹی بنائی گئی ہے ۔ 2017-18 مالی سال میں 50 کروڑ سے زائد بجٹ کی اسکیمات کو اس جائزہ میں بنیادی طور پر شامل کیا جائیگا ۔ وزیر اعلیٰ کے سی آر کی جانب سے تین سال میں کئے گئے اعلانات ، نیتی آیوگ ڈاکیومنٹس ، پلاننگ کمیشن ویژن 2020 اور ویژن 2030 ڈیولپمنٹ اکٹویٹیز ، اور اکٹوبر 2014 میں تمام وزارتوں کی جانب سے ترتیب دئیے گئے مسودہ لے کر تلنگانہ 2024 دس سالہ منصوبہ تیار کیا جائے گا اور اس ویژن کی تیاری میں سہ ماہی وقت درکار ہوگا اور اس ویژن کو تمام محکمہ جات میں روانہ کیا جائے گا ۔ مختلف محکمہ جات کے متعلقین اس کا جائزہ لیں گے اور اس تمام عمل کو سی جی جی کوآرڈینٹ کرے گی اور اس کی نگرانی ، صلاح و مشورے ، حذف و اضافہ کے لیے حکومت ایک کور گروپ افسرس کا تقرر کرے گی ۔ ہر ایک محکمہ 2014 اور حالیہ صورتحال اور آئندہ 2024 میں کیا صورتحال ہوگی اس سے متعلق رپورٹ تیار کرے گا اور تمام محکموں کو ریاستی و مرکزی حکومت کے مقاصد کو مد نظر رکھتے ہوئے اپنے مقاصد کو ترتیب دینا ہوگا اور شروع کردہ اسکیمات کے ذریعہ کس حد تک فائدہ پہونچ رہا ہے اور اس سے متعلق ماہرین کی مدد حاصل کی جاسکتی ہے علاوہ ازیں اس ضمن میں خصوصی ورک شاپس بھی منعقد کی جاسکتی ہیں اور رپورٹ تیار کر کے کور گروپ کو پیش کرنا ہوگا ۔۔

TOPPOPULARRECENT