Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کی 800مساجد میں 18جون کو اجتماعی دعوت افطار

تلنگانہ کی 800مساجد میں 18جون کو اجتماعی دعوت افطار

16جون کو رمضان گفٹ کے طور پر ملبوسات کی تقسیم ‘ ریاستی حکومت کے احکام کی اجرائی

حیدرآباد ۔ 5۔ جون (سیاست نیوز) تلنگانہ حکومت نے رمضان المبارک کے موقع پر شہر اور اضلاع میں 800 مساجد کے پاس اجتماعی دعوت افطار کے اہتمام کا فیصلہ کیا ہے۔ اس کے علاوہ 4 لاکھ افراد میں حکومت کی جانب سے رمضان گفٹ کے طور پر کپڑے تقسیم کئے جائیں گے ۔ کپڑوںکی تقسیم 16 جون کو عمل میں آئے گی جبکہ 18 جون کو اجتماعی دعوت افطار کا اہتمام کیا جائے گا ۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے اس سلسلہ میں احکامات جاری کرتے ہوئے بتایا کہ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے حدود میں 24 اسمبلی حلقوں کے تحت 420 مساجد میں افطار کا اہتمام کیا جائے گا ۔ انہوں نے بتایا کہ ہر مسجد میں 500 افراد کیلئے افطار اور ڈنر کا اہتمام ہوگا اور ہر مسجد میں 500 گفٹ پیاکٹس کی تقسیم عمل میں آئے گی۔ ہر کارپوریٹر کے علاقہ میں دو مساجد اور ہر رکن اسمبلی کے حلقہ میں چار مساجد کا انتخاب کیا جائے گا ۔ اس کے علاوہ گریٹر حیدرآباد کے حدود میں شیعہ ، مہدوی فرقوں کی مساجد اور یتیم خانوں میں بھی افطار اور کپڑوں کی تقسیم عمل میں آئے گی ۔ یہ تعداد 24 ہے ۔ اس طرح جملہ 420 مساجد میں حکومت افطار ، ڈنر اور کپڑوں کی تقسیم کا اہتمام کرے گی۔ گزشتہ سال حکومت نے دو لاکھ افراد کو کپڑے تقسیم کئے تھے لیکن جاریہ سال سے یہ تعداد چار لاکھ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ اضلاع کے 95 اسمبلی حلقوں میں 380 مساجد کا انتخاب کیا جائے اور رکن اسمبلی اپنے حلقہ سے 4 مساجد کے ناموں کی سفارش کریںگے ۔ گریٹر حیدرآباد کے حدود کے ماسوا اضلاع کی مساجد میں افطار ، ڈنر کیلئے ہر شخص پر 200 روپئے خرچ کے حساب سے فنڈس متعلقہ ضلع کلکٹر کو جاری کئے جائیں گے۔ اس کے علاوہ ہر مسجد کو 500 کپڑوں کے گفٹ پیاکٹس کی اجرائی محکمہ اقلیتی بہبود کی جانب سے عمل میں آئے گی ۔ ضلع کلکٹرس سے خواہش کی گئی ہے کہ وہ متعلقہ ارکان اسمبلی سے 4 مساجد کے نام اور ان کے بینک اکاؤنٹس نمبر حاصل کریں۔ تاکہ بینک اکاؤنٹس میں رقم جمع کرائی جاسکیں۔ سلم علاقوں اور غریب بستیوں سے قریب واقع مساجد کا انتخاب عمل میں آئے گا۔ ضلع کلکٹرس کو گفٹ پیاکٹس کی کوالیٹی کا جائزہ لینے کی ہدایت دی گئی ہے۔ 200 روپئے فی کس کے اعتبار سے 500 افراد کی افطار کی رقم ضلع کلکٹرس متعلقہ مساجد کے اکاؤنٹس میں جمع کرائیں گے ۔ مساجد کمیٹیوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ غریب خاندان اور خاص طور پر بیوہ اور بے سہارا خواتین اور یتیم و یسیر بچوں میں کپڑوں کی تقسیم عمل میں لائیں۔ گریٹر حیدرآباد کے حدود میں کمشنر جی ایچ ایم سی ہر کارپوریٹر سے ان کے حلقہ کی دو مساجد کے نام حاصل کرچکے ہیں۔ چیف اگزیکیٹیو آفیسر تلنگانہ وقف بورڈ ارکان اسمبلی سے ان کے حلقہ کی 4 مساجد کی فہرست حاصل کریں گے۔ گریٹر حیدرآباد کے حدود میں تقسیم کئے جانے والے کپڑے حج ہاؤز سے جاری کئے جائیں گے۔ چیف اگزیکیٹیو آفیسر تلنگانہ وقف بورڈ ہر مسجد کمیٹی کے اکاؤنٹ میں افطار کے اخراجات کے طور پر ایک لاکھ روپئے جاری کریں گے۔ اس کے علاوہ مسجد کمیٹیوں کے صدر کو 500 گفٹ پیاک حوالے کئے جائیں گے ۔ ڈائرکٹر اقلیتی بہبود کی جانب سے کپڑوں کے معیار کا جائزہ لینے کیلئے فلائینگ اسکواڈ تشکیل دیا جائیگا ۔ پولیس ، میناریٹی ویلفیر ڈپارٹمنٹ اور ٹکسٹائیل ڈپارٹمنٹ پر مشتمل ٹیم کپڑوں کی پیاکنگ پر نگرانی رکھے گی۔ 14 جون تک ریاست میں کپڑوں کے گفٹ پیاکٹس کی مساجد کو سربراہی کا عمل مکمل ہوجائے گا۔

TOPPOPULARRECENT