Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کے ارکان اسمبلی کی تعداد میں اضافہ کی تجویز کو منظوری پر زور

تلنگانہ کے ارکان اسمبلی کی تعداد میں اضافہ کی تجویز کو منظوری پر زور

ریاست کے درپیش مسائل پر مرکزی وزیر ایم وینکیا نائیڈو سے ٹی آر ایس ایم پیز کی نمائندگی
حیدرآباد۔/7جنوری، ( سیاست نیوز ) ٹی آر ایس کے ارکان پارلیمنٹ نے آج نئی دہلی میں مرکزی وزیر پارلیمانی اُمور ایم وینکیا نائیڈو سے ملاقات کی اور ریاست کو درپیش مسائل کے سلسلہ میں نمائندگی کی۔ ارکان پارلیمنٹ ڈاکٹر کے کیشو راؤ اور ونود کمار نے وینکیا نائیڈو سے ملاقات کرتے ہوئے آندھرا پردیش کی تقسیم کے بعد تلنگانہ کو درپیش مسائل سے واقف کرایا۔انہوں نے کہا کہ نئی ریاست کے مسائل کی یکسوئی میں مرکز کے معاندانہ رویہ سے نظم و نسق چلانے میں حکومت کو دشواریوں کا سامنا ہے۔ ارکان پارلیمنٹ نے مرکزی وزیر سے خواہش کی کہ اسمبلی کے ارکان کی تعداد میں اضافہ سے متعلق حکومت کی تجویز کو منظوری دلانے کیلئے اقدامات کریں۔ نئی ریاست کے قیام کے بعد ارکان اسمبلی کی تعداد میں اضافہ ناگزیر ہوچکا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ وینکیا نائیڈو نے اس سلسلہ میں اقدامات سے اتفاق کیا۔ تاہم انہوں نے کہا کہ اس سلسلہ میں ماہرین قانون سے صلاح و مشورہ کیا جائے گا۔ وینکیا نائیڈو نے نشستوں میں اضافہ، ہائیکورٹ کی تقسیم اور دیگر اُمور پر اٹارنی جنرل سے مشاورت کا تیقن دیا ہے۔ بعد میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ڈاکٹر کیشوراؤ نے کہا کہ مرکزی حکومت کے رویہ کے سبب تلنگانہ حکومت کو کئی دشواریوں کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کی تقسیم کو اٹھارہ ماہ مکمل ہوگئے لیکن آج تک ہائی کورٹ تقسیم نہیں کی گئی۔ اس سلسلہ میں وزیر اعظم سے بارہا نمائندگی کی جاچکی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ میں زیر التواء پراجکٹس کیلئے مرکزی امداد اور پسماندہ ریاست تلنگانہ کی ترقی کیلئے خصوصی پیاکیج کی بھی مانگ کی جارہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT