Sunday , July 22 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کے اضلاع میں نئے ایرپورٹس کا منصوبہ عادل آباد

تلنگانہ کے اضلاع میں نئے ایرپورٹس کا منصوبہ عادل آباد

حیدرآباد ۔ 10 ۔ اپریل (سیاست ڈاٹ کام) تلنگانہ کے جن اضلاع میں نئے ایرپورٹس یا موجودہ ایرپٹیوں کو ایرپورٹس میں تبدیل کرنے کا منصوبہ بنایا گیا ہے ان میں عادل آباد بھی شامل ہے۔ عادل آباد کو ایرپورٹ کے ضمن میں اس لئے بھی اہمیت حاصل ہے کیونکہ یہاں نظام کے زمانے میں ہی ایرپورٹ کے قیام کا منصوبہ موجود تھا کیونکہ اس وقت کے سرکار عادل آباد میں ایرپورٹ کے قیام کے خواہاں تھے۔ عادل آباد کے مضافاتی علاقہ میں فی الحال 368 ایکڑ اراضی پر ایرفیلڈ موجود ہے لیکن یہ گذشتہ 6 دہوں سے خالی پڑا ہوا ہے۔ چیف منسٹر نے گذشتہ ماہ یہاں کا دورہ کرنے کے بعد اعلان کیا ہیکہ عادل آباد کے اس ایرفیلڈ کو مینی ایراسٹرپ (چھوٹی ہوائی پٹی) میں تبدیل کیا جائے گا۔ عادل آباد میں ایرپورٹ کے قیام کی ایک اہم وجہ یہ بھی ہیکہ یہاں پہلے سے ہی ایرفورس کے عہدیدار سالانہ یہاں کی ایرفیلڈ کا معائنہ کرتے ہیں۔ نیز عادل آباد میں ایرپورٹ کے قیام سے شمالی تلنگانہ سے مہاراشٹرا اور دیگر ریاستوں کے اہم علاقوں کو آسانی سے جوڑا جاسکتا ہے۔ علاوہ ازیں عادل آباد میں ایرپورٹ کا قیام اس لئے بھی سودمند ثابت ہوگاکیونکہ یہاں طیاروں کی جاسوسی کیلئے استعمال کیا جانے والا سسٹم بھی موجود ہے اور ماہرین کا ماننا ہیکہ عادل آباد کا یہ ایرپورٹ جاسوسی طیاروں کیلئے اہمیت کا حامل ہوگا۔ شمس آباد ایرپورٹ سے عادل آباد کا فاصلہ 300 کیلو میٹر ہے اور سڑک کے راستہ سے حیدرآباد پہنچنے کیلئے 7 گھنٹوں کا سفر طئے کرنا پڑتا ہے۔ عادل آباد میں ایرپورٹ کے قیام سے قومی طیاروں کے ذریعہ حیدرآباد تا عادل آباد کا سفر طیارے سے صرف ایک گھنٹے کے اندرون طئے کیا جاسکتا ہے۔ عادل آباد کیلئے فی الحال ناگپور ایرپورٹ قریب ترین ایرپورٹ ہے۔ امید کی جارہی ہیکہ اسمبلی میں چیف منسٹر چندرشیکھر راؤ نے جس منصوبہ کا اعلان کیا ہے اس کے تحت آنے والے چند برسوں کے دوران عادل آباد کی عوام طیاروںکی آوازیں اور اس کے ذریعہ آسان سفر کے خواب کو حقیقت میں بدلتا دیکھ پائیں گے۔ عادل آباد کو تجارتی اور تاریخی اعتبار سے اہمیت حاصل ہونے کے علاوہ کثیرالآبادی اس ضلع کی نئی ریاست تلنگانہ کے تناظر میں ترقی بھی اہمیت کی حامل ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT