Thursday , April 26 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کے اضڈع میں نئے ایرپورٹس کا منصوبہ ورنگل

تلنگانہ کے اضڈع میں نئے ایرپورٹس کا منصوبہ ورنگل

حیدرآباد 8 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) ورنگل، نظام آباد، پداپلی، عادل آباد، کتہ گوڑم اور کھمم کے عوام کو اپنے ہی شہر اور علاقہ میں نیا ایرپورٹ دستیاب ہوسکتا ہے کیونکہ تلنگانہ چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ نے اسمبلی میں اعلان کیا ہیکہ وہ ریاست میں نئے ایرپورٹس کا منصوبہ رکھتے ہیں اور اس کیلئے مذکورہ مقامات اہمیت حاصل کرچکے ہیں کیونکہ ان میں چند مقامات پر پہلے ہی ہوائی پٹی موجود ہے جن کو ایرپورٹ میں بدلنا کوئی بڑا اور مشکل پراجکٹ نہیں ہوگا۔ تلنگانہ میں جن مقامات پر نئے ایرپورٹس کے قیام کا منصوبہ ہے اس میں ورنگل کو بھی اہمیت حاصل ہے۔ قومی اور بین الاقوامی منازل کیلئے ریاست تلنگانہ کے اضلاع کے عوام کو حیدرآباد کے شمس آباد ایرپورٹ تک پہنچنا پڑتا ہے اور اس کیلئے ورنگل اور حیدرآباد کے درمیان 150 کیلو میٹر کا فاصلہ ہے اور شمس آباد ایرپورٹ تک پہنچنے میں 3 گھنٹے لگ جاتے ہیں۔ ورنگل میں ایرپورٹ کے قیام کے امکانات اس لئے بھی روشن ہیں کیونکہ یہاں ممنور ایرپورٹ ورنگل کے مضافاتی علاقہ میں موجود ہے جو این سی سی کی ٹریننگ کیلئے استعمال کیا جاتا ہے۔ گذشتہ برس ورنگل کے دورہ کے موقع پر چیف منسٹر نے ممنور ایرپورٹ کو ترقی دینے کی بات کہی تھی۔ انہوں نے کہا تھا کہ اگر مرکزی وزارت ہوا بازی اگر یہاں ایرپورٹ تعمیر نہیں کرتی ہے تو ریاستی حکومت اپنے فنڈ سے ایرپورٹ تعمیر کرے گی۔ وعدہ کے باوجود ہنوز کچھ نہیں ہوا ہے لیکن حالیہ دنوں میں اسمبلی میں نئے ایرپورٹ کے قیام کا مسئلہ اٹھنے کے بعد ممنور میں ایرپورٹ کی تعمیر کے امکانات روشن ہوچکے ہیں۔ حیدرآباد کے بعد ورنگل ریاست میں ترقی کے اعتبار سے دوسرا بڑا شہر ہے جہاں کئی صنعتیں موجود ہیں۔ ممنور میں اگر ایرپورٹ بن جاتا ہے تو حیدرآباد اور ورنگل کے درمیان 45 منٹ میں طیارہ کے ذریعہ سفر مکمل کیا جاسکتا ہے۔ ریاستی حکومت حیدرآباد اور ورنگل کے درمیان انڈسٹریل زون کا منصوبہ رکھتی ہے اور اس منصوبہ کو پائے تکمیل تک پہنچانے کیلئے یہاں ایرپورٹ کا قیام سونے پر سہاگہ ہوگا۔ سابق چیف منسٹر آنجہانی وائی ایس راج شیکھر ریڈی کی حکومت کے دوران بھی ایرپورٹ اتھاریٹی آف انڈیا (اے اے آئی) نے بھی ممنور اور کڑپہ میں ایرپورٹ کو ترقی دینے کیلئے باہمی یادداشت مفاہمت پر دستخط کئے تھے۔

TOPPOPULARRECENT