Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کے حجاج کرام کی واپسی کا آغاز

تلنگانہ کے حجاج کرام کی واپسی کا آغاز

ح448 حجاج کرام کا ڈپٹی چیف منسٹر اور دیگر معززین نے طیارہ تک پہنچ کر استقبال کیا

حیدرآباد ۔ 21 ۔ ستمبر (سیاست نیوز) حج بیت اللہ کی ادائیگی اور مدینہ منورہ میں روزہ اقدس پر حاضری کی سعادت کے بعد تلنگانہ کے حجاج کرام کی واپسی کا آج صبح آغاز ہوچکا ہے۔ حجاج کرام کا پہلا قافلہ مدینہ منورہ سے سعودی ایرلائینس کی خصوصی پرواز کے ذریعہ آج صبح 4 بجکر 45 منٹ پر شمس آباد انٹرنیشنل ایرپورٹ پہنچا ۔ 448 حجاج کرام کے اس قافلہ کا ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے استقبال کیا۔ حکومت کے مشیر برائے اقلیتی امور اے کے خاں ، اسپیشل آفیسر تلنگانہ حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور اور صدرنشین اقلیتی مالیاتی کارپوریشن سید اکبر حسین اس موقع پر موجود تھے۔ اس قافلہ میں 450 حجاج کرام شامل تھے۔ تاہم لمحہ آخر میں ایک حاجی صاحب کی طبیعت بگڑنے پر انہیں ان کی اہلیہ کے ہمراہ طیارہ سے اتارنا پڑا۔ اس طرح 55 منٹ تاخیر سے طیارہ مدینہ منورہ سے روانہ ہوا۔ کوکٹ پلی کے ساکن 60 سالہ کلیم الرحمن کو تنفس کی شکایت پر مدینہ منورہ کے الانصار ہاسپٹل میں شریک کیا گیا تھا۔ انہوں نے ڈاکٹرس کے مشورہ کو نظرانداز کرتے ہوئے سفر کرنے کا فیصلہ کیا، جیسے ہی وہ طیارہ میں سوار ہوئے ان کی طبیعت بگڑ گئی اور پائلیٹ نے اس حالت میں پرواز سے انکار کردیا۔ کافی سمجھانے کے بعد انہیں دوبارہ ہاسپٹل منتقل کیا گیا جس کے بعد طیارہ نے اڑان بھری۔ حیدرآباد ایرپورٹ پر ڈپٹی چیف منسٹر نے حجاج کرام کے 5 لیٹر زم زم کے کیان حوالے کئے۔ ڈپٹی چیف منسٹر اور دیگر معززین نے طیارہ تک پہنچ کر حجاج کرام کا استقبال کیا اور ضعیف حجاج کرام کو سیڑھیوں سے اترنے میں مدد کی۔ ڈپٹی چیف منسٹر کو بعض حجاج کرام کا سامان اٹھاتے ہوئے دیکھا گیا۔ انہوں نے حجاج کرام سے انتظامات کے بارے میں استفسار کیا جس پر تمام حجاج کرام نے انتظامات کی ستائش کی۔ ان کا کہنا تھا کہ روانگی کے وقت جس طرح حج کمیٹی نے انتظامات کئے تھے ، مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں بھی بہتر انتظامات رہے۔ تلنگانہ حج کمیٹی کے اسپیشل آفیسر حیدرآباد سے حجاج کرام سے ربط میں رہے اور خادم الحجاج نے ہر مرحلہ پر موثر رہنمائی کی۔ حج ٹرمنل میں حجاج کرام کیلئے بہتر انتظامات کئے گئے تھے اور کسٹمس اور امیگریشن کی کارروائیاں جلد مکمل کرتے ہوئے انہیں روانہ کیا گیا۔ ٹرمنل کے باہر رشتہ داروں اور دوست احباب کی کثیر تعداد حجاج کرام کے استقبال کی منتظر تھی جنہوں نے جذباتی انداز میں اپنے رشتہ داروں کا استقبال کیا۔ اس موقع پر ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے کہا کہ فریضہ حج کی ادائیگی کے بعدحجاج کرام کی خیریت سے واپسی تلنگانہ حکومت کیلئے باعث اطمینان ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بہتر انتظامات کے سلسلہ میں تلنگانہ حج کمیٹی ہر سال مثالی کمیٹی ثابت ہورہی ہے ۔ ملک کی کسی بھی ریاست میں اس طرح کے انتظامات نہیں کئے گئے ۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی سرپرستی میں حجاج کرام کی صحت و سلامتی کیلئے معقول انتظامات کئے گئے تھے ۔ انہوں نے اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور کو مبارکباد پیش کی۔ اے کے خاں نے حجاج کرام کو مبارکباد پیش کی اور کہا کہ اللہ تعالیٰ نے جو موقع عطا کیا ہے ، وہ احسان عظیم ہے۔ پروفیسر ایس اے شکور حجاج کرام کی ٹرمنل سے روانگی تک موجود رہے۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ ، آندھراپردیش اور کرناٹک سے 6347 حجاج کرام حیدرآباد سے روانہ ہوئے تھے۔ قافلوں کی واپسی 29 ستمبر تک جاری رہے گی۔
حج ہاؤز میں کنٹرول روم کے
قیام کا فیصلہ
حیدرآباد ۔ 21 ستمبر (سیاست نیوز) تلنگانہ حج کمیٹی نے حجاج کرام کے قافلوں کی واپسی کے موقع پر حج ہاؤز میں کنٹرول روم کے قیام کا فیصلہ کیا ہے۔ اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ حجاج کرام کے قافلوں کی واپسی کے اوقات اور مدینہ منورہ میں موجود حجاج کے بارے میں تفصیلات بتانے کیلئے خصوصی کنٹرول روم قائم کیا گیا ہے۔ سنٹرل حج کمیٹی نے ممبئی میں اس طرح کا کنٹرول روم قائم کیا اور تلنگانہ حج کمیٹی ریاستوں میں پہلی حج کمیٹی ہے جس میں یہ کنٹرول روم قائم کیا۔ اس کنٹرول روم میں 4 شفٹ میں 6 ملازمین موجود رہیں گے اور 24 گھنٹے عوام کے استفسارات کا جواب دیں گے ۔ یہ کنٹرول روم 29 ستمبر کی شام تک برقرار رہے گا جس دن آخری قافلہ واپس ہوگا۔ فلائیٹ کے اوقات کے علاوہ حجاج کرام کی خیریت دریافت کی جاسکتی ہے۔ کنٹرول روم کے فون نمبرات حسب ذیل ہے 040-23238077، 040-23238078 ۔

 

TOPPOPULARRECENT