Friday , September 21 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کے سرکاری محکمہ جات میں تقررات کے لیے کسی بھی وقت اعلامیہ کی اجرائی ممکن

تلنگانہ کے سرکاری محکمہ جات میں تقررات کے لیے کسی بھی وقت اعلامیہ کی اجرائی ممکن

مسلم نوجوانوں کو مسابقت کے لیے تیار رہنے کی ضرورت ، غفلت یا تحفظات کی امید نہ رکھیں

مسلم نوجوانوں کو مسابقت کے لیے تیار رہنے کی ضرورت ، غفلت یا تحفظات کی امید نہ رکھیں
حیدرآباد۔ 20 اپریل (سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ میں ایک لاکھ سے زائد مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات کیلئے کسی بھی وقت اعلامیہ کی اجرائی عمل میں آسکتی ہے۔ کیا مسلم نوجوان ان ملازمتوں میں موجود مسابقتی دوڑ میں حصہ لینے کے موقف میں ہیں؟ مسلم نوجوانوں بالخصوص تعلیم یافتہ نوجوانوں کے لئے عنقریب تقررات کے سلسلے میں جاری کیا جانے والا اعلامیہ انتہائی اہمیت کا حامل ہے چونکہ نوتشکیل شدہ ریاست میں پہلے اور بڑے پیمانے پر تقررات میں مسابقتی دوڑ کافی زیادہ ہونے کی توقع ہے۔ اس مسابقتی دوڑ سے نمٹنے اور کامیابی حاصل کرنے کیلئے یہ ضروری ہے کہ نوجوان خود کو اس سلسلے میں تیار رکھتے ہوئے عملی طور پر امتحانات کی تیاری کا آغاز کردیں۔ بتایا جاتا ہے کہ ایک لاکھ سے زائد ملازمتوں کیلئے جاری کئے جانے والے اس اعلامیہ کے ذریعہ ہونے والے تقررات کے بعد ایک طویل عرصے تک تقررات اتنے بڑے پیمانے پر ہونا ناممکن ہے۔ نوجوانوں کو تحفظات کے ذریعہ ملازمتوں میں اپنا حصہ حاصل کرنے کے علاوہ عام زمرہ میں اپنی صلاحیتوں کو منواتے ہوئے مسابقتی دوڑ میں حصہ لینے کیلئے تیار رہنے کی ضرورت ہے۔ ریاست تلنگانہ میں ہونے والے سرکاری عہدوں پر تقررات کے معاملے میں جو نظریہ اقلیتی طبقات بالخصوص مسلمانوں میں پایا جارہا ہے، وہ انتہائی نقصان دہ ثابت ہوسکتا ہے چونکہ مسلمانوں میں ملازمتوں کے حصول کے متعلق پائی جارہی منفی فکر کو دُور کرنے کی ضرورت ہے۔ ذمہ دار عمائدین ملت اسلامیہ اگر نوجوانوں میں مثبت مسابقتی جذبہ پیدا کرتے ہوئے انہیں سرکاری ملازمتوں کے حصول کی جانب راغب کرتے ہیں تو ایسی صورت میں ملت اسلامیہ کو عملی طور پر مختلف شعبہ جات میں کامیابی حاصل ہوسکتی ہے۔ ریاست کے مختلف شعبہ جات کا اگر جائزہ لیا جائے تو مسلمانوں کی تیزی سے گھٹ رہی تعداد سے جو نقصانات ہورہے ہیں اس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ ریاست تلنگانہ میں مختلف عہدوں پر فائز کرنے کیلئے حکومت کو ڈپٹی سیکریٹری رینک کے مسلم عہدیدار میسر نہیں ہیں، جس کی وجہ سے ایک عہدیدار کو ایک سے زائد ذمہ داریاں یا پھر دوسرے محکمہ جات سے عہدیدار کی طلبی کے ذریعہ خدمات حاصل کرنی پڑ رہی ہیں۔ اس صورتحال سے نمٹنے کیلئے یہ ضروری ہے کہ ریاست تلنگانہ میں ہونے والے بڑے پیمانے پر تقررات کے موقع پر غفلت یا تحفظات کی اُمید کے بغیر مسابقتی جذبہ پیدا کرتے ہوئے کامیابی سے ہمکنار ہونے اور سرکاری ملازمت حاصل کرنے کی کوشش کی جائے۔

TOPPOPULARRECENT