Monday , November 20 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کے مختلف محکمہ جات میں عدم تال میل آشکار

تلنگانہ کے مختلف محکمہ جات میں عدم تال میل آشکار

کل ہند مشاعرہ کے باب الداخلہ پر پولیس کے بجائے خانگی سیکوریٹی و باونسرس کی تعیناتی
حیدرآباد۔3جون ( سیاست نیوز ) محکمہ اقلیتی بہبود کی جانب سے منعقدہ ادبی تقاریب کے باب الداخلوں پر خانگی سیکیوریٹی اور باؤنسرس کی تعیناتی سے یہ واضح ہو رہا ہے کہ ریاست کے محکمہ جات میں تال میل نہیں ہے اور نہ ہی محکمہ جات ایک دوسرے کی مدد میں سنجیدہ ہیں۔ حکومت کی جانب سے منعقد ہونے والے پروگرامس میں عام طور پر محکمہ پولیس کی جانب سے سیکیوریٹی فراہم کی جاتی ہے لیکن گزشتہ یوم منعقدہ کل ہند مشاعرہ کے باب الداخلوں پر خانگی سیکیوریٹی اور باؤنسرس کی تعیناتی سے ایسا محسوس ہو رہا تھا جیسے یہ کوئی ادبی تقریب کا باب الداخلہ نہیں ہے بلکہ کسی بار اور پب کا باب الداخلہ ہے جہاں حالت نشہ میں آپے سے باہر ہونے والے افراد کو سنبھالنے کیلئے انہیں متعین کیا جاتا ہے۔ حکومت کے ہی سرکاری محکمہ جات کی جانب سے منعقد کئے جانے والے پروگرام میں خانگی سیکیوریٹی کی تعیناتی سے نہ صرف پروگرام کی ساکھ متاثر ہوتی ہے بلکہ خانگی سیکیوریٹی کی تعیناتی سے محکمہ کے اثر و رسوخ کا بھی اندازہ ہوتا ہے۔ با وثوق ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے بموجب محکمہ اقلیتی بہبود کی جانب سے منعقدہ ان پروگرامس میں سیکیوریٹی و صیانتی انتظامات کے لئے پولیس سے درخواست کی گئی تھی لیکن محکمہ پولیس نے عملہ نہ ہونے کا بہانہ کرتے ہوئے اس درخواست کو نظرانداز کر دیا۔ جبکہ محکمہ پولیس کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ اگر درخواست موصول ہوتی تو بڑے پیمانے پر وسیع تر انتظامات کئے جاتے لیکن ایسی کوئی درخواست موصول نہیں ہوئی کہ باب الداخلوں پر سیکیوریٹی تعینات کی جائے۔قلی قطب شاہ اسٹیڈیم میں منعقدہ مشاعرہ میں شرکت کے لئے پہنچنے والے کئی افراد صرف بیرونی حصہ میں تعینات باؤنسرس اور خانگی سیکیوریٹی عملہ کے رویہ کے سبب واپس چلے گئے ۔

TOPPOPULARRECENT