Thursday , December 13 2018

تلنگانہ کے پانچ اہم شہروں کو ترقی دینے کا منصوبہ

کے سی آر کی ارکان اسمبلی سے بات چیت، شخصی طور پر اقدامات کرنے کا فیصلہ

کے سی آر کی ارکان اسمبلی سے بات چیت، شخصی طور پر اقدامات کرنے کا فیصلہ
حیدرآباد 14 اکٹوبر (سیاست نیوز) چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندرشیکھر راؤ نے بشمول شہر حیدرآباد تلنگانہ علاقہ کے پانچ اہم شہروں کو زبردست ترقی دینے کی ذمہ داری ازخود لینے کا اعلان کیا۔ آج یہاں سکریٹریٹ میں رکن اسمبلی کھمم مسٹر پی اجئے کمار، رکن اسمبلی کتہ گوڑہ مسٹر جلگم وینکٹ راؤ اور رکن اسمبلی نلگنڈہ مسٹر کے وینکٹ ریڈی کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے شہروں کی ترقی کے مسئلہ پر ان ارکان کے ساتھ تفصیلی تبادلہ خیال کیا اور بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر کے سی آر نے حیدرآباد، ورنگل، کریم نگر، نظام آبادا ور کھمم جیسے اہم شہروں کو تیز رفتار ترقی پانے والے شہر قرار دیا اور کہاکہ کل کے تلنگانہ میں انتہائی اہم ترین شہروں میں تبدیلی ہونے کا اعلان کیا۔ لہذا اسی کے پیش نظر ان شہروں کی منصوبہ بند انداز میں ترقی دینے کی ضرورت پر چیف منسٹر نے زور دیا۔ ریاست تلنگانہ کی راجدھانی کہلائے جانے والے شہر حیدرآباد میں ہی ڈرینج نظام انتہائی ناکارہ ہے جس کے باعث تلنگانہ قانون ساز اسمبلی، راج بھون اور چیف منسٹرس کی رہائش گاہوں کے روبرو معمولی بارش ہونے پر زبردست پانی جمع ہونے کے واقعات پیش آتے ہیں۔ اُنھوں نے مزید کہاکہ شہری علاقوں میں پائے جانے والے نالوں پر غیر مجاز قبضے ہوچکے ہیں اور اس طرح ان تمام شہروں کی حالت میں بہتری پیدا کرنے کیلئے کم از کم دس ہزار کروڑ روپئے درکار ہیں۔ اُنھوں نے مزید کہاکہ تلنگانہ کے دیگر شہری علاقے بھی مناسب انداز میں ترقی پارہے ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT