Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کے پہلے یوم تاسیس پر سرکاری ملازمین میں تشویش

تلنگانہ کے پہلے یوم تاسیس پر سرکاری ملازمین میں تشویش

گرمائی تعطیلات کا عنقریب آغاز ، لائحہ عمل سے طلبہ اور اساتذہ بھی متفکر

گرمائی تعطیلات کا عنقریب آغاز ، لائحہ عمل سے طلبہ اور اساتذہ بھی متفکر
حیدرآباد ۔ 5 ۔ مارچ : ( سیاست نیوز ) : گرمائی تعطیلات کے آغاز سے قبل گرمائی تعطیلات کے دوران ریاست تلنگانہ کے پہلے یوم تاسیس کے مسئلہ پر سرکاری ملازمین ، اساتذہ اور طلبہ میں تشویش پائی جارہی ہے ۔ حکومت تلنگانہ کے بموجب ریاست کے پہلے یوم تاسیس کے موقعہ پر تمام اسکولس کھلے رکھے جانے اور اسکولوں میں مقابلے جات منعقد کئے جانے کا منصوبہ تیار کیا جارہا ہے ۔ اس منصوبہ کو عملی جامہ پہنائے جانے کی صورت میں یوم تاسیس تلنگانہ یعنی2 جون کو گرمائی تعطیلات کے درمیان ایک یوم کے لیے اسکول کھلا رکھنا پڑسکتا ہے ۔ ریاستی حکومت نے تلنگانہ کے قیام کی پہلی یوم تاسیس کو نہایت دھوم دھام سے منانے کا فیصلہ کیا ہوا ہے ۔ لیکن گرمائی تعطیلات اس فیصلہ میں رکاوٹ ثابت ہوسکتے ہیں اور اس فیصلہ پر عمل آوری کو یقینی بنانے کے لیے اسکولوں و کالجس کا تعاون ضروری ہے ۔ حکومت تلنگانہ کے تعلیمی کیلنڈر کے مطابق 24 اپریل تا 11 جون گرمائی تعطیلات ہیں اور گرمائی تعطیلات کے اواخر میں یعنی 2 جون کو یوم تاسیس تقریب کے لیے اسکول کی کشادگی اور پھر ایک ہفتہ کے لیے اسکول بند کئے جانے سے الجھن پیدا ہونے کا خدشہ ہے ۔ حکومت نے تاحال اس خصوص میں کوئی فیصلہ نہیں کیا ہے لیکن عہدیداروں کو اس بات کی ہدایت دی جاچکی ہے کہ وہ پہلے یوم تاسیس کے انعقاد کے سلسلہ میں اپنی تجاویز پیش کریں ۔ ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے بموجب چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ ریاست کے پہلے یوم تاسیس میں تلنگانہ کے ہر شہری و شعبہ کو شامل کرنے کا منصوبہ رکھتے ہیں لیکن گرمائی تعطیلات کے سبب اسکول و کالجس میں تعلیم حاصل کررہے طلباء و طالبات گرمائی تعطیلات میں مصروف ہوتے ہیں اور اساتذہ جو کہ گرمائی تعطیلات کے دوران بھی امتحانات کی ڈیوٹی کے علاوہ پرچہ جات کی تنقیح وغیرہ سے جون کے اوائل میں ہی فارغ ہوتے ہیں اور اساتذہ کی عملی تعطیلات کا آغاز ہوتا ہے اسی لیے اساتذہ اس بات سے کافی فکر مند ہیں کہ اگر حکومت نے اسکولوں میں مقابلہ جات منعقد کرنے کا فیصلہ کرلیا یا پھر تعطیلات کے دوران یوم تاسیس تقاریب میں طلبہ کی شمولیت کو یقینی بنانے کی ہدایت دیدی گئی تو ایسی صورت میں انہیں 2 جون کو ہی نہیں بلکہ طلبہ کو مقابلوں میں حصہ لینے کے لیے تیار کروانے ایک ہفتہ پہلے سے خدمات انجام دینی پڑیں گی اور گرمائی تعطیلات کے دوران طلبہ کو اسکول طلب کیا جانا بھی ایک انتہائی دشوار کن عمل ہے چونکہ اسکول کے آغاز کے ساتھ ہی طلبہ اسکول نہیں پہنچتے بلکہ سرکاری اسکولوں میں طلبہ کو اسکول لانے کے لیے تو باضابطہ مہم چلانی پڑتی ہے ۔ اساتذہ ، طلبہ و اولیائے طلبہ کو ہونے والی دشواریوں کے متعلق محکمہ تعلیم کی جانب سے چیف منسٹر کو رپورٹ پیش کرتے ہوئے اسکولوں وتعلیمی اداروں کو مستثنیٰ قرار دیا جاسکتا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT