Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کے 11 بڑے شہروں میں سربراہی آب کیلئے 405 کروڑ کا منصوبہ

تلنگانہ کے 11 بڑے شہروں میں سربراہی آب کیلئے 405 کروڑ کا منصوبہ

وزارت شہری ترقی کو حکومت تلنگانہ کی تجاویز پیش ، امرت مشن کے تحت ہر پراجیکٹ کیلئے مرکز کی امداد
نئی دہلی۔ 25 اکتوبر (پی ٹی آئی) تلنگانہ میں جاریہ مالیاتی سال کے دوران 11 شہروں میں سربراہی آب میں اضافہ کیلئے 405.17 کروڑ روپئے خرچ کئے جائیں گے۔ اٹل مشن برائے ریجونیشن اور اربن ٹرانسفرمیشن (امرت) اسکیم کے تحت وزارت شہری ترقی نے تلنگانہ کے لئے رقومات منظور کرنے پر غور کیا ہے۔ ریاستی حکومت نے تمام 11 بڑے شہروں میں سربراہی آب میں اضافہ پر توجہ مرکوز کی ہے۔ ان شہروں میں سربراہی آب کی مقدار مقررہ اصولوں روزانہ فی شخص 135 لیٹر کے برعکس کم پانی سربراہ کیا جارہا ہے۔ امرت کے رہنمایانہ خطوط کے مطابق وزارت شہری ترقی میں ریاستی حکومت کا سالانہ ایکشن پلان پیش کیا گیا ہے۔ امرت اسکیم کے تحت ملک بھر میں 500 شہروں میں انفراسٹرکچر ڈیولپمنٹ پر توجہ دی جارہی ہے۔ وزارت شہری ترقی کے مطابق حکومت تلنگانہ نے ریاست کے 11 بڑے شہروں میں سربراہی آب میں اضافہ کی تجویز پیش کی ہے۔ شہری علاقوں میں رہنے والے عوام کو سربراہی آب کے علاوہ سیوریج نیٹ ورک کنکشنس بھی دینے اولین ترجیح ہے۔ حکومت کے مجوزہ منصوبہ کے مطابق ریاستی حکومت نے کہا کہ فی الحال بڑے شہروں میں 65 ایل پی سی ڈی سے لے کر گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن میں 114 ایل پی سی ڈی پانی سربراہ کیا جارہا ہے۔ تلنگانہ کے دیگر شہروں میں سربراہی آب کا موقف اس طرح ہے۔ محبوب نگر میں 75 ایل پی سی ڈی، ورنگل 80، سوریہ پیٹ 90، مریال گوڑہ 90، کھمم 100، عادل آباد 102، نلگنڈہ 102، نظام آباد 108 اور کریم نگر 109 ایل پی سی ڈی ہے۔ ریاستی حکومت نے ان شہروں میں سال 2020ء تک تقریباً ہر گھر کو پانی کی سربراہی  اور سیوریج کنکشن کو یقینی بنانے کا منصوبہ بنایا ہے۔ امرت رہنمایانہ خطوط کے مطابق ان شہروں کو اولین ترجیح دی جائے گی جہاں پر انفراسٹرکچر اور دیگر سہولتوں میں فرق پایا جاتا ہے۔ امرت کے پانچ سالہ مشن کے دوران تلنگانہ حکومت نے سربراہی آب پر 5413 کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری کی تجویز رکھی ہے جبکہ 11 بڑے شہروں میں ہر گھر کو سیوریج کنکشن دینے کے لئے 5435 کروڑ روپئے کا بجٹ مختص کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ شہروں میں سرسبز و شادابی علاقوں اور پارکس کی ترقی کیلئے 89 کروڑ روپئے خرچ کئے جائیں گے۔ امرت مشن کے تحت مرکزی حکومت ہر شہر کی آبادی کی بنیاد پر سربراہی آب کے پروجیکٹ پر آنے والی لاگت کا ایک تہائی حصہ ادا کرے گی۔ اگر آبادی 10 لاکھ سے بڑھ کر ہو تو مرکزی امداد پراجیکٹ کی لاگت کا ایک تہائی حصہ ہوگا۔ دیگر شہروں کے لئے پراجکٹ کی لاگت کا نصف حصہ دیا جائے گا۔ مقامی بلدیات کے لئے مرکزی حکومت پوری لاگت برداشت کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT