Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کے 26 اضلاع میں کلکٹریٹس اور کوارٹرس کی تعمیر

تلنگانہ کے 26 اضلاع میں کلکٹریٹس اور کوارٹرس کی تعمیر

حصول اراضی کی کارروائی مکمل ، 1032 کروڑ کے خرچ کا تخمینہ
حیدرآباد ۔ 18 ۔ اگست : ( سیاست نیوز) : اضلاع کی تنظیم جدید کے بعد حکومت تلنگانہ نے 26 اضلاع میں عالیشان کلکٹریٹ عمارتیں اور 21 مقامات پر سرکاری ملازمین کے کوارٹرس تعمیر کرنے کے لیے 1032 کروڑ روپئے کا تخمینہ تیار کیا گیا ۔ ہر ایک کلکٹریٹ کی تعمیر پر 30 تا 35 کروڑ روپئے خرچ کئے جائیں گے ۔ 14 اضلاع میں حصول اراضیات کی کارروائی مکمل ہوگئی ہے ۔ مزید 12 اضلاع میں حصول اراضی کا کام تیزی سے جاری ہے ۔ ریاستی وزیر آئی ٹی و صنعت کے ٹی آر کے اسمبلی حلقہ سرسلہ میں 93 ایکڑ اراضی پر کلکٹریٹ کی تعمیر کی جارہی ہے ۔ جن اضلاع میں حصول اراضی کا کام مکمل ہوگیا ہے ۔ ان اضلاع میں کلکٹریٹ کی نئی عمارتوں کی تعمیرات کے لیے ٹنڈرس طلب کرنے کی کارروائی مکمل ہوگئی ہے ۔ ریاست تلنگانہ کے 31کے منجملہ 5 اضلاع ورنگل ( دیہی ) ، عادل آباد ، سنگاریڈی ، نلگنڈہ ، حیدرآباد میں کلکٹریٹس کی عمارتیں موجود ہیں ۔ ماباقی 26 اضلاع میں کلکٹریٹس کے لیے نئی عمارتیں تعمیر کرنے کا حکومت نے فیصلہ کیا ہے ۔ ساتھ ہی 21 مقامات پر کوارٹرس بھی تعمیر کئے جارہے ہیں ۔ چیف منسٹر کے سی آر نے اضلاع ہیڈکوارٹر پر تمام محکمہ جات کے دفاتر کو ایک چھت کے نیچے لانے کا فیصلہ کیا ہے ۔ نئے کلکٹریٹس کے عمارتوں کی تعمیرات پر 1032 کروڑ روپئے خرچ ہونے کا تخمینہ تیار کیا گیا ہے ۔ ہر ایک کلکٹریٹ کی تعمیر پر 30 تا 35 کروڑ روپئے کے مصارف ہوں گے ۔ ضلع ناگر کرنول کے کلکٹریٹ کے لیے انتخاب کردہ اراضی مختص کردہ اراضی کی حیثیت سے ریکارڈ میں شناخت ہوئی ہے ۔ اس پر ابھی کوئی واضح فیصلہ نہیں ہوا ہے ۔ ضلع پداپلی میں محکمہ آبپاشی کی اراضی کی حیثیت سے شناخت کی گئی ۔ متذکرہ ان تین اضلاع کے لیے متعلقہ محکمہ جات سے اجازت حاصل ہونا باقی ہے ۔ ان اضلاع کلکٹریٹس کا ڈیزائن اضلاع کی تاریخی اہمیت کو پیش نظر رکھتے ہوئے اُشا ریڈی آرکیٹیکٹ نے تیار کیا ہے ۔ چیف منسٹر تلنگانہ نے ڈیزائن میں معمولی تبدیلی کرتے ہوئے اس کی ساری ذمہ داری محکمہ عمارات و شوارع پر چھوڑ دی ہے ۔ حصول اراضیات کے معاملے میں اضلاع سرسلہ میں 93 ایکڑ ، سوریہ پیٹ میں 55.35 ایکڑ جوگولامبا گدوال میں42 ایکڑ سدی پیٹ میں 23.15 ایکڑ ، منچریال میں 26.27 ایکڑ ، کمرم بھیم آصف آباد میں 29.32 ایکڑ ، کھمم میں 18 ایکڑ ، جگتیال میں 25.34 ایکڑ محبوب آباد میں 32.11 ایکڑ ، نظام آباد میں 25 ایکر ، کاماریڈی میں 25 ایکڑ ، وقار آباد میں 19 ایکڑ ، بھونگیر یادادری میں 12 ایکڑ ، ونپرتی میں 20 ایکڑ اراضی کی نشاندہی کرلی گئی ہے ۔ مختلف مقامات سدی پیٹ ، کتہ گوڑم ، کاماریڈی ، میڑچل ، وقار آباد ، جنگاؤں ، بھونگیر ، سرسلہ ، نرمل ، سوریا پیٹ ، میدک ، ناگر کرنول ، پداپلی ، ونپرتی ، جگتیال ، ورنگل ( دیہی ) ، منچریال ، گدوال ، آصف آباد ، محبوب نگر ، بھوپال پلی میں اضلاع کلکٹریٹس کے ساتھ ملازمین کے کوارٹرس بھی تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔۔

 

TOPPOPULARRECENT