Saturday , June 23 2018
Home / شہر کی خبریں / تلگودیشم ارکان اسمبلی کا جبراً اسمبلی لابی میں داخلہ

تلگودیشم ارکان اسمبلی کا جبراً اسمبلی لابی میں داخلہ

حیدرآباد /13 مارچ (سیاست نیوز) تلگودیشم رکن اسمبلی ریونت ریڈی اور چیف مارشل و پولیس عہدہ داروں کے درمیان اسمبلی کے باب الداخلہ پر بحث ہو گئی۔ واضح رہے کہ تلگودیشم کے تمام ارکان اسمبلی کو بجٹ سیشن کے اختتام تک معطل کردیا گیا ہے۔ آج تلگودیشم کے مذکورہ رکن، سکریٹری اسمبلی سے ملاقات کے لئے جا رہے تھے کہ انھیں پولیس نے باب الداخلہ پر روک دیا اور ان سے کہا کہ معطل ارکان اسمبلی کو لابی میں داخلے کی اجازت نہیں ہے۔ ریونت ریڈی کی برہمی دیکھ کر پولیس نے چیف مارشل اسمبلی کو طلب کیا، جنھوں نے بتایا کہ ہدایت کے مطابق معطل ارکان کو لابی میں داخلے کی اجازت نہیں ہے۔ دریں اثناء ریونت ریڈی نے کہا کہ تلگودیشم کے ارکان کو صرف ایوان کی کارروائی سے معطل کیا گیا ہے، جب کہ اسمبلی کے احاطہ میں داخلے سے نہیں روکا گیا۔ اگر آپ کے پاس تحریری احکامات ہیں تو پیش کریں، ورنہ راستے سے ہٹ جائیں۔ انھوں نے کہا کہ منتخب نمائندوں کو روک کر ان کی توہین کرنے کا حق پولیس یا مارشل کو نہیں ہے۔ وہ قانون اور دستور کو اچھی طرح جانتے ہیں، ہمارے اختیارات کو پولیس سلب نہیں کرسکتی۔ انھوں نے کہا کہ چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ من مانی کر رہے ہیں۔ اسمبلی میں اپوزیشن کی آواز دبانے کے لئے تلگودیشم کے ارکان کو بجٹ سیشن تک معطل کیا گیا ہے، جس کی تلگودیشم سخت مذمت کرتی ہے۔ انھوں نے کہا کہ تلگودیشم ارکان کو اسمبلی میں داخل ہونے سے روکنے کا اختیار اسپیکر اسمبلی کو بھی نہیں ہے۔ انھوں نے پولیس اور چیف مارشل کو انتباہ دیا کہ آئندہ اگر اس طرح سے روکا گیا تو تلگودیشم قانونی کارروائی کرے گی۔ اسی دوران تلگودیشم کے مزید ارکان اسمبلی پہنچ گئے اور ریونت ریڈی کی تائید کرتے ہوئے پولیس اور مارشل پر برس پڑے اور زبردستی اسمبلی میں داخل ہو گئے۔

TOPPOPULARRECENT