Tuesday , December 18 2018

تلگودیشم اور بی جے پی کارکنوں کا اقدام خودسوزی

حیدرآباد۔7اپریل ( سیاست نیوز)تلگودیشم اور بی جے پی کی انتخابی مفاہمت دونوں پارٹیوں کیلئے پریشان کن ثابت ہورہی ہے ۔تلگودیشم لیڈر و سابق زیڈ پی ٹی سی شیخ غیاث الدین نے اس مفاہمت پر دلبرداشتہ ہوکر اقدام خودسوزی کی ۔دوسری طرف بی جے پی کارکن بھگوت راجیش نے بھی اس اتحاد کے خلاف خودکشی کی کوشش کی ۔تفصیلات کے بموجب یلاریڈی میں شیخ غیاث الدین نے جسم پر کیروسین چھڑک کر خود کو آگ لگانے کی کوشش کی لیکن پارٹی کارکنوں نے انہیں روک دیا ۔ یہ اطلاع تیزی سے پھیل گئی اور ہزاروں افراد ان سے ملاقات کیلئے یلاریڈی پہنچے ۔ غیاث الدین نے کہا کہ وہ ابتداء سے تلگودیشم سے وابستہ رہے اور انہیں زیڈ پی ٹی سی کیلئے سارے ضلع میںبھاری اکثریت سے کامیابی کااعزاز حاصل رہا ۔ انہوں نے کہا کہ چندرا بابو نائیڈو نے پارٹی قائدین اورکارکنوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچائی ہے اور وہ اب تک بھی اس صدمہ سے باہر نہیں نکل پائے ۔ اسی طرح بی جے پی کارکن بھگوت راجیش نے پارٹی آفس واقع نامپلی پر جسم پر کیروسین چھڑک لیا اور آگ لگانے کی کوشش کررہا تھا کہ دیگر کارکنوں نے اسے روک لیا ۔تلگودیشم سے اتحاد کے خلاف مختلف مقامات ایل بی نگر ‘ حضورآباد ‘ کریم نگر ‘ نلگنڈہ ‘ ظہیرآباد وغیرہ سے آئے کارکنوں نے یہاں احتجاجی مظاہرہ کیا ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT