Tuesday , January 16 2018
Home / شہر کی خبریں / تلگودیشم اور کانگریس تلنگانہ میں برقی بحران کے ذمہ دار

تلگودیشم اور کانگریس تلنگانہ میں برقی بحران کے ذمہ دار

نائیڈو کی تلنگانہ سے جھوٹی ہمدردی، اپوزیشن جماعتوں کو تعمیری رول ادا کرنے کا مشورہ : ایٹالہ راجندر

نائیڈو کی تلنگانہ سے جھوٹی ہمدردی، اپوزیشن جماعتوں کو تعمیری رول ادا کرنے کا مشورہ : ایٹالہ راجندر

حیدرآباد۔/11اکٹوبر، ( سیاست نیوز) وزیر فینانس ای راجندر نے الزام عائد کیا کہ تلنگانہ میں موجودہ برقی بحران کیلئے کانگریس اور تلگودیشم ذمہ دار ہیں، ان دونوں پارٹیوں کی حکومتوں کے دوران برقی کے شعبہ میں غلط پالیسی فیصلوں کے سبب آج تلنگانہ ریاست کو برقی کی قلت کا سامنا ہے۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے راجندر نے اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے حکومت پر کی جارہی تنقیدوں کو یہ کہتے ہوئے مسترد کردیا کہ اپوزیشن پہلے اپنے دور حکومت کی کارکردگی کا جائزہ لینے بعد میں حکومت پر تنقید کرے۔ راجندر نے کہا کہ طویل جدوجہد کے بعد تلنگانہ ریاست حاصل کی گئی اور ٹی آر ایس حکومت سنہرے تلنگانہ کی تشکیل کیلئے اقدامات کررہی ہے ایسے میں کانگریس اور تلگودیشم قائدین الزامات عائد کرتے ہوئے حکومت کی کارکردگی کو متاثر کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ میں برقی کی قلت اور کسانوں کی خودکشی کیلئے بھی یہی جماعتیں ذمہ دار ہیں۔ اگر ان کی حکومتوں نے درست فیصلے کئے ہوتے تو آج کسانوں کی خودکشی کی نوبت نہ آتی۔ راجندر نے کہا کہ عوام کو حکومت سے متنفر کرنے کیلئے اپوزیشن جماعتیں برقی کے مسئلہ پر احتجاج کررہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آندھرا پردیش تنظیم جدید بل کے تحت برقی کے شعبہ میں تلنگانہ کا حصہ 64فیصد ہے لیکن آندھرا پردیش تلنگانہ کو اس کے حق سے محروم کئے ہوئے ہے۔ وزیر فینانس نے کہا کہ شنکر پلی اور نیدنور برقی پراجکٹس کو سابقہ حکومتوں نے گیس کی سربراہی سے انکار کیا تھا جس کے نتیجہ میں ان پراجکٹس میں برقی کی پیداوار کا آغاز نہیں ہوسکا۔انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس نے پہلے ہی واضح کردیا تھا کہ حکومت کے ابتدائی دنوں میں ریاست میں برقی کی قلت کا سامنا ہوسکتا ہے۔ حکومت اس صورتحال سے نمٹنے کیلئے اقدامات کررہی ہے اور آئندہ تین برسوں میں تلنگانہ ریاست برقی بحران سے نجات پالے گی۔ انہوں نے چیف منسٹر آندھرا پردیش چندرا بابو نائیڈو کے الزامات کو مسترد کردیا اور کہا کہ نائیڈو تلنگانہ سے جھوٹی ہمدردی کا اظہار کررہے ہیں حالانکہ ان کی سازش کے سبب ہی تلنگانہ برقی کی قلت سے دوچار ہے۔ انہوں نے تلگودیشم اور کانگریس قائدین سے سوال کیا کہ ان کے دور میں نئے برقی پراجکٹس کے آغاز کے اقدامات کیوں نہیں کئے گئے۔وزیر فینانس نے اپوزیشن کو مشورہ دیا کہ وہ حکومت پر تنقیدوں کے بجائے مسائل کی یکسوئی کے سلسلہ میں تعمیری تجاویز پیش کریں۔

TOPPOPULARRECENT