تلگودیشم ایم پیز کو دہلی ہی میں قیام کرنے چندرا بابو کی ہدایت

حیدرآباد ۔ 7 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : صدر تلگو دیشم پارٹی و چیف منسٹر آندھرا پردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے اپنی پارٹی کے تمام ارکان پارلیمان کو دہلی میں قیام کرنے کی ہدایات دیں اور کہا کہ آئندہ موجودہ سیاسی حالات کو پیش نظر رکھتے ہوئے مزید دو تین دن دہلی میں موجودگی ضروری ہے ۔ دہلی میں مقیم ارکان پارلیمان تلگو دیشم کے ساتھ ٹیلی کانفرنسنگ کے ذریعہ خطاب کرتے ہوئے چندرا بابو نائیڈو نے تازہ ترین سیاسی صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا اور گذشتہ دن یعنی 6 اپریل بروز جمعہ اسپیکر لوک سبھا کے دفتر ( آفس ) میں ایوان کی کارروائی کے ملتوی کردئیے جانے کے اعلان کے فوری بعد ریاست آندھرا پردیش کو خصوصی موقف فراہم کرنے اور تقسیم ریاست کے موقعہ پر دئیے گئے تیقنات پر عمل آوری کرنے کے مطالبہ پر احتجاج کرتے ہوئے زائد از چھ گھنٹوں تک بیٹھے رہنے پر ارکان پارلیمان کی ستائش کی اور کہا کہ گذشتہ 12 یوم سے مسلسل مرکزی حکومت کے خلاف پیش کردہ تحریک عدم اعتماد پر مباحث کے مطالبہ پر احتجاج کے باوجود مباحث نہ کروا کر پارلیمنٹ کی کارروائی کو مسلسل ملتوی کرنے والی اسپیکر لوک سبھا شریمتی سمترا مہاجن کے چیمبر کے پاس دھرنا منظم کیا گیا جو کہ ایک غیر معمولی اقدام ہے ۔ چیف منسٹر نے بتایا کہ احتجاجی ارکان پارلیمان کو اسپیکر لوک سبھا کے چیمبر کے پاس سے مارشلس کے ذریعہ ہٹانے پر مجبور ہونا پڑا ۔ مسٹر نائیڈو نے کہا کہ ریاست کے مفادات سے متعلق مسئلہ ہرگز کسی قسم کا سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا ۔ لہذا ارکان پارلیمان سے ریاستی مفادات کو پیش نظر رکھتے ہوئے کسی بھی قربانیوں کے لیے تیار رہنے کی پر زور خواہش کی ۔

TOPPOPULARRECENT