Tuesday , September 18 2018
Home / شہر کی خبریں / تلگودیشم این ڈی اے کی حلیف ہونے کے باوجود مراعات حاصل کرنے سے محروم

تلگودیشم این ڈی اے کی حلیف ہونے کے باوجود مراعات حاصل کرنے سے محروم

چار سال میں چندرابابو 29 مرتبہ دورہ
دہلی فضول ثابت ، جئے رام رمیش کی تنقید
حیدرآباد ۔ /18 فبروری (سیاست نیوز) سینئر کانگریس قائد و سابق مرکزی وزیر مسٹر جئے رام رمیش نے چیف منسٹر آندھراپردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو کو ہدف ملامت بنایا اور کہا کہ چار سال میں 29 مرتبہ دہلی کا دورہ کرنے والے چیف منسٹر نے اتنے دوروں کے باوجود ریاست کیلئے اب تک کچھ بھی حاصل نہیں کرسکے ۔ آج تروپتی میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے مسٹر جئے رام رمیش نے کہا کہ ریاست کی تقسیم کو غیر منصفانہ تقسیم قرار دینے والے چیف منسٹر اب مرکزی حکومت سے بات چیت کرکے اب بھی منصفانہ انداز میں ریاست کی ازسرنو تقسیم کروائی جاسکتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مرکز میں برسراقتدار این ڈی اے کی تلگودیشم حلیف رہتے ہوئے بھی آندھراپردیش کیلئے ابھی تک کچھ حاصل نہ کرنا تعجب خیز ہے ۔ سابق مرکزی وزیر نے پرزور انداز میں کہا کہ واقعی ریاستی مفادات و ریاست کی ترقی سے تلگودیشم پارٹی سنجیدہ ہو تو مرکزی حکومت کی تائید سے تلگودیشم پارٹی کو فی الفور دستبرداری اختیار کرلینا چاہئیے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ آندھراپردیش کی تقسیم کے موقع پر ریاست آندھراپردیش کو خصوصی موقف دینے کا جو وعدہ کیا گیا تھا کانگریس پارٹی آج بھی اس وعدے کی نہ صرف پابند ہے بلکہ اپنے اس موقف پر ہی برقرار ہے ۔ مسٹر جئے رام رمیش نے الزام عائد کیا کہ تقسیم ریاست کے موقع پر دیئے گئے تیقنات کو پورا کرنے و عمل آوری کرنے میں مرکزی حکومت بالکلیہ طور پر ناکام ہوجانے اور دیئے ہوئے تیقنات حاصل کرلینے میں تلگودیشم پارٹی مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT