Saturday , September 22 2018
Home / شہر کی خبریں / تلگودیشم دفتر کو نقصان پہنچانے پر چیف منسٹر کے خلاف شکایت

تلگودیشم دفتر کو نقصان پہنچانے پر چیف منسٹر کے خلاف شکایت

تلنگانہ تلگودیشم قائدین کی راج بھون میں گورنر سے ملاقات

تلنگانہ تلگودیشم قائدین کی راج بھون میں گورنر سے ملاقات
حیدرآباد /24 اکتوبر (سیاست نیوز) تلنگانہ تلگودیشم قائدین نے گورنر سے ملاقات کرتے ہوئے نلگنڈہ میں تلگودیشم دفتر کو نقصان پہنچانے کے خلاف شکایت کی۔ تلنگانہ تلگودیشم قائدین ای دیاکر راؤ، ایم نرسمہلو اور دیگر نے راج بھون میں گورنر نرسمہن سے ملاقات کی اور ٹی آر ایس کارکنوں پر پارٹی آفس کو نقصان پہنچانے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ تلگودیشم کے خلاف اشتعال انگیز بیانات دے کر ٹی آر ایس کیڈر کو اُکسا رہے ہیں۔ اس دوران گورنر نے شکایت کا جائزہ لینے کا تیقن دیا۔ بعد ازاں ایم نرسمہلو نے بتایا کہ کے چندر شیکھر راؤ بحیثیت چیف منسٹر ناکام ہو گئے ہیں، لہذا اپنی ناکامیوں کو چھپانے کے لئے صدر تلگودیشم و چیف منسٹر آندھرا پردیش این چندرا بابو نائیڈو کو تنقید کا نشانہ بناکر ان کی نیک نامی کو متاثر کرنا چاہتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ برقی مسئلہ کے حل میں ناکامی کے بعد چیف منسٹر تلنگانہ غیر ضروری چندرا بابو نائیڈو کے خلاف بے بنیاد الزامات عائد کر رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ برقی مسائل سے متاثر ہوکر اندرون چار ماہ تلنگانہ کے 250 کسان خودکشی کرچکے ہیں، اس طرح کے سی آر کو چیف منسٹر کے عہدہ پر برقرار رہنے کا اخلاقی حق نہیں ہے۔ خودکشی کرنے والے کسانوں کے ارکان خاندان کو چیف منسٹر یا ٹی آر ایس قائدین نے پرسہ دینا بھی مناسب نہیں سمجھا اور جب تلگودیشم قائدین کسانوں کے ارکان خاندان سے ملاقات کر رہے ہیں تو ٹی آر ایس قائدین ان پر حملہ کر رہے ہیں۔ دریں اثناء تلگودیشم قائد ایل رمنا نے کہا کہ حکومت تمام محاذوں پر ناکام ہو چکی ہے۔ تلگودیشم رکن اسمبلی ای دیاکر راؤ نے خودکشی کرنے والے کسانوں کے ارکان خاندان کو فی کس 10 لاکھ روپئے ایکس گریشیا کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ چیف منسٹر تلنگانہ، چیف منسٹر آندھرا پردیش پر بے بنیاد جھوٹے الزامات عائد کر رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT