Thursday , November 23 2017
Home / Top Stories / تلگودیشم کے دو ارکان اسمبلی کی ٹی آر ایس میں شمولیت

تلگودیشم کے دو ارکان اسمبلی کی ٹی آر ایس میں شمولیت

گوپی  ناتھ اور اے گاندھی کو چیف منسٹر کے سی آر نے پارٹی کھنڈوا پہنایا
حیدرآباد۔/11مارچ، ( سیاست نیوز) تلگودیشم پارٹی کے 2 ارکان اسمبلی ماگنٹی گوپی ناتھ اور آر کے گاندھی نے آج ٹی آر ایس میں باقاعدہ شمولیت اختیار کرلی۔ گریٹر حیدرآباد تلگودیشم پارٹی کے صدر گوپی ناتھ جو حلقہ اسمبلی جوبلی ہلز کی نمائندگی کرتے ہیں اور شیرلنگم پلی کے رکن اسمبلی آر کے گاندھی نے آج چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے ملاقات کی۔ چیف منسٹر نے انہیں پارٹی کا کھنڈوا پہنا کر استقبال کیا۔ ان کے ہمراہ متعلقہ اسمبلی حلقوں کے ڈیویژن انچارج ، صدور اور دیگر اہم قائدین نے بھی ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرلی۔ تلگودیشم کے دونوں ارکان اسمبلی کی شمولیت سے اسمبلی میں پارٹی ارکان کی تعداد گھٹ کر محض 3 رہ گئی ہے۔ گریٹر حیدرآباد کے صدر گوپی ناتھ کی شمولیت سے شہر میں تلگودیشم پارٹی کو زبردست دھکا لگا ہے۔ تلگودیشم کے 12ارکان اسمبلی ابھی تک ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرچکے ہیں جن میں فلور لیڈر دیاکر راؤ، سرینواس یادو، جی سائینا، ٹی پرکاش گوڑ، ٹیگلا کرشنا ریڈی، منچی ریڈی کشن ریڈی، ایم کرشنا راؤ، کے پی ویویکانند، سی ایچ دھرما ریڈی، ایس راجندر ریڈی، ایم گوپی ناتھ اور اے گاندھی شامل ہیں۔ اسپیکر مدھو سدن چاری نے تلگودیشم کے 12ارکان اسمبلی کو ٹی آر ایس میں شامل کرتے ہوئے اعلامیہ جاری کیا ہے اور انہیں ٹی آر ایس کی صفوں میں نشستیں الاٹ کی ہیں۔ ٹی آر ایس میں شمولیت کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے گوپی ناتھ نے کہا کہ جوبلی ہلز اسمبلی حلقہ کی ترقی کیلئے انہوں نے ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلگودیشم پارٹی کا وہ احترام کرتے ہیں تاہم حیدرآباد کو عالمی معیار کا شہر بنانے اور سنہرے تلنگانہ کی تشکیل سے متعلق چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے اقدامات نے انہیں ٹی آر ایس کی طرف راغب کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ شہر اور تلنگانہ ریاست کی ترقی چاہتے ہیں جو ٹی آر ایس سے ممکن ہے۔ انہوں نے کہا کہ حلقہ کے تمام قائدین کو ساتھ لیکر وہ ترقی کو یقینی بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر نے جن فلاحی و ترقیاتی اقدامات کا آغاز کیا ہے وہ اس سے کافی متاثر ہوئے ہیں۔ وزیر ٹرانسپورٹ ایم مہیندر ریڈی نے تلگودیشم ارکان اسمبلی کی ٹی آر ایس میں شمولیت کی تائید کی۔ انہوں نے کہا کہ چندرا بابو نائیڈو نے این ٹی راما راؤ کو دھوکا دیا تھا لیکن تلگودیشم کے ارکان اسمبلی اپنے حلقہ جات کی ترقی کیلئے ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کررہے ہیں۔ انہوں نے تلنگانہ تلگودیشم قائدین کی تنقیدوں کو مسترد کردیا۔ اس موقع پر ظہیر آباد پارلیمانی حلقہ سے تلگودیشم لوک سبھا امیدوار ایم موہن راؤ، تلگودیشم انچارج بودھن ایم پرکاش ریڈی اور دوسروں نے بھی چیف منسٹر کی موجودگی میں ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرلی۔ چیف منسٹر نے انہیں کھنڈوا پہنایا۔ اس موقع پر ریاستی وزراء ہریش راؤ، کڈیم سری ہری، ٹی ناگیشور راؤ، مہیندرریڈی، رکن پارلیمنٹ کویتا، ارکان اسمبلی ونئے بھاسکر، جیون ریڈی، پربھاکر، دیاکر راؤ، ویویکانند، ایم کرشنا راؤ اور دوسرے موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT