تلگو دیشم قائدین کی بس یاترا سے کسانوں میں الجھن

برقی بحران کی حکومت اے پی ذمہ دار ، وزیر فینانس تلنگانہ ایٹالہ راجندر کا ادعا

برقی بحران کی حکومت اے پی ذمہ دار ، وزیر فینانس تلنگانہ ایٹالہ راجندر کا ادعا
حیدرآباد۔13۔اکتوبر (سیاست نیوز) وزیر فینانس ایٹلہ راجندر نے الزام عائد کیا کہ تلنگانہ تلگو دیشم قائدین کی بس یاترا کا مقصد کسانوں میں الجھن پیدا کرنا ہے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ تلنگانہ میں موجودہ برقی بحران کیلئے آندھراپردیش حکومت ذمہ دار ہے۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے راجندر نے کہا کہ تلگو دیشم قائدین حقائق کو فراموش کرتے ہوئے بس یاترا کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چندرا بابو نائیڈو نے چیف منسٹر کی حیثیت سے زراعت کو فضول قرار دیا تھا لیکن آج وہ تلنگانہ کے کسانوں سے جھوٹی ہمدردی کا اظہار کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کسانوں نے برقی کی شرحوں میں اضافہ کے خلاف ایجی ٹیشن کیا تو تلگو دیشم حکومت نے ان پر فائرنگ کی تھی۔ ان تمام حقائق کو فراموش کرتے ہوئے تلگو دیشم قائدین تلنگانہ حکومت کیلئے مسائل میں اضافہ کی کوشش کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 25,000 کسانوں کی خودکشی کیلئے چندرا بابو نائیڈو ذمہ دار ہے اور اس کا اعتراف خود تلگو دیشم قائدین کو بھی ہے لیکن تلنگانہ میں پارٹی کو دوبارہ عوام سے قریب کرنے کیلئے بس یاترا کا سہارا لیا گیا۔ وزیر فینانس نے کہا کہ برقی بحران کی یکسوئی میں تعاون کرنے کے بجائے تلگو دیشم پارٹی صورتحال کو سیاسی رنگ دینے کی کوشش کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ میں فی الوقت 35,000 ملین یونٹ برقی کا بحران ہے اور اس سے نمٹنے میں آندھراپردیش حکومت تعاون کرنے کے بجائے برسر اقتدار پارٹی کے قائدین حکومت کو تنقید کا نشانہ بنارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آندھراپردیش تنظیم جدید بل میں تلنگانہ کو برقی شعبہ میں جو حصہ داری دی گئی، آندھراپردیش حکومت اس سے محروم رکھنے کی کوشش کر رہی ہے۔ آندھراپردیش میں واقع برقی پراجکٹ سے تلنگانہ کو اس کے حصہ کے مطابق برقی سربراہی سے انکار کیا جارہا ہے ۔ اس سلسلہ میں انہوں نے مختلف برقی پراجکٹس کی پیداوار اور سرپلائی کی تفصیلات بیان کی۔ انہوں نے کہا کہ اگر آندھراپردیش حکومت کو تلنگانہ کے کسانوں سے حقیقی معنوں میں ہمدردی ہے تو اسے چاہئے کہ وہ کسانوں کی مدد کیلئے آگے آئے۔ راجندر نے کہا کہ تلگو دیشم قائدین کی بس یاترا سے عوام ہرگز گمراہ نہیں ہوں گے کیونکہ وہ اچھی طرح جانتے ہیںکہ تلگو دیشم مخالف تلنگانہ پارٹی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلگو دیشم پارٹی کی مخالف کسان پالیسیوں کے نتیجہ میں 2004 ء میں عوام نے اسے مستردکردیا تھا۔ وزیر فینانس نے کہا کہ تلنگانہ کے موجودہ برقی بحران کیلئے تلگو دیشم اور کانگریس حکومتوں کی غلط پالیسیاں ذمہ دار ہیں۔ انہوں نے کسانوں کو یقین دلایا کہ حکومت ان کی فصلوں کو تباہی سے بچانے کیلئے ہر ممکن اقدامات کرے گی ۔ صنعتی شعبہ کو برقی کٹوتی کے ذریعہ زرعی شعبہ کو سربراہی میں اضافہ کیا جائے گا ۔ وزیر فینانس نے کہا کہ آئندہ تین برسوں میں تلنگانہ ریاست برقی کی قلت سے نجات پالے گی۔

TOPPOPULARRECENT