Sunday , September 23 2018
Home / ہندوستان / تمام بنک ڈپازٹس کی مکمل حفاظت

تمام بنک ڈپازٹس کی مکمل حفاظت

ایف آر ڈی آئی ایل پر خوف کی ضرورت نہیں : جیٹلی
نئی دہلی ۔11 ڈسمبر۔( سیاست ڈاٹ کام) وزیر فینانس ارون جیٹلی نے ایک مسودہ قانون کے بارے میں عوام کی تشویش اور اندیشوں کو دور کرتے ہوئے آج کہا کہ مالیاتی اداروں میں عوام کے ڈپاز ٹ کا حکومت کی طرف سے مکمل تحفظ کیا جائے گا ۔ انھوں نے مجوزہ ایف آر ڈی آئی بل میں تبدیلیوں کیلئے کھلا ذہن رکھنے کااشارہ بھی دیا ۔ جیٹلی نے کہاکہ بینکوں میں 2.11 لاکھ کروڑ روپئے کا خطیر سرمایہ شامل کرنے حکومت کا وسیع تر منصوبہ دراصل بینکوں کو مستحکم بنانے کے مقصد پر مبنی ہے اور کسی قرض فراہم کنندہ ادارہ کی ناکامی کا کوئی سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ۔ ایسی صورتحال اگر کبھی پیدا بھی ہوگی تو بینک صارفین کی ڈپازٹس کا حکومت کی طرف سے مکمل تحفظ کیا جائے گا ۔ اس مسئلہ پر حکومت کاموقف بالکل واضح ہے ۔ جیٹلی نے مالیاتی یکسوئی اور ضمانتوں ( ڈپازٹ) کے انشورینس (ایف آر ڈی آئی) بل 2017 کے بارے میں پیدشدہ تشویش دور کرنے کیلئے یہ تبصرہ کئے ہیں۔ یہ بل رواں سال اگسٹ کے دوران لوک سبھا میں پیش کیا گیا تھا اور فی الحال ایک مشترکہ پارلیمانی کمیٹی کی تنقیح میں ہے ۔ واضح رہے کہ اس مسودہ قانون میں بینکوں کو بچانے کی نام نہاد فعہ پر اقتصادی ماہرین نے اپنے تبصروں میں اشارہ کیا تھا کہ اس سے مختلف بینکوں میں سیونگ اکاؤنٹس کی شکل میں رکھائے جانے والی رقومات (ڈپازٹس) کو خطرہ لاحق ہوسکتا ہے ۔ جیٹلی نے کہاکہ اس بل کی بعض دفعات کے بارے میں افواہیں پھیلائی جارہی ہیں حکومت پہلے یہ واضح کرچکی ہے کہ عوامی شعبہ کی بینکوں اور مالیاتی اداروں کو مستحکم بنانے 2.11 لاکھ کروڑ روپئے کا خطیر سرمایہ عوامی شعبہ کی بینکوں میں شامل کیا جارہا ہے ۔ مسودہ قانون میں تجویز کردہ ’ریزولیوشن کارپوریشن ‘ اس عمل کا نگراں ہوگا اوربینکوں کو بوجھ ختم کرتے ہوئے دیوالیہ ہونے سے محفوظ رکھے گا ۔ تاہم اس فقرہ کی بعض گوشوں نے ’بچانے ‘ کی تشریح کی ہے جس سے غلط فہمی پیدا ہوئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT