Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / تمام طبقات کی بھلائی کیلئے کئی اسکیمات روشناس

تمام طبقات کی بھلائی کیلئے کئی اسکیمات روشناس

’’دورہ میدک کے موقع پر ترقیاتی کاموں کا افتتاح ‘‘چیف منسٹر کا خطاب
حیدرآباد۔/10 جون، ( سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے آج میدک کے ایراولی میں مختلف ترقیاتی کاموں میں حصہ لیا۔ انہوں نے مقامی کسانوں اور نوجوانوں کیلئے مختلف اسکیمات کے تحت فوائد کا اعلان کیا۔ انہوں نے موضع کے بیروزگار نوجوانوں میں ٹریکٹرس کی تقسیم عمل میں لائی۔ چیف منسٹر کے ہاتھوں 42 ٹریکٹرس تقسیم کئے گئے جن کے استعمال کے ذریعہ بیروزگار نوجوان اپنی آمدنی خود حاصل کرسکیں گے۔ اس موقع پر مخاطب کرتے ہوئے چیف منسٹر نے کہا کہ ہر طبقہ کی بھلائی کیلئے حکومت نے اسکیمات کا آغاز کیا ہے اور وہ چاہتے ہیں کہ اسکیمات کے فوائد حقیقی مستحقین تک پہنچیں۔ چیف منسٹر نے ڈبل بیڈ روم مکانات کی فراہمی کا تیقن دیتے ہوئے کہا کہ مکانات کی تکمیل جلد عمل میں آئے گی اور ان کی تقسیم دراصل غریبوں کیلئے کسی عید سے کم نہیں ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ ایراولی کے ہر غریب خاندان کو ڈبل بیڈ روم مکان فراہم کیا جائے گا۔ چیف منسٹر نے کہا کہ عصری ٹکنالوجی سے آراستہ کرنے کیلئے ایراولی اور نرسمہا پیٹ مواضعات کے ہر گھر کو انٹرنیٹ کنکشن فراہم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور اس سلسلہ میں ریلائینس کمپنی نے اپنی خدمات کا پیشکش کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہر گھر کو گوداوری کا پانی 24 گھنٹے فراہم کیا جائے گا اور اس سلسلہ میں اسکیم آخری مراحل میں ہے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ہر گھر کیلئے ایک ٹینک کی تعمیر کے ذریعہ پانی کا ذخیرہ کیا جاسکتا ہے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ایراولی موضع ایک خود مکتفی موضع بن چکا ہے اور عوام حکومت کی اسکیمات سے بہتر طور پر استفادہ کرتے ہوئے اپنی معاشی صورتحال بہتر بنارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گوداوری کے پانی کی سربراہی اسکیم پر اندرون دو سال عمل کیا جائے گا جس سے کسانوں کو حسب ضرورت آبپاشی کیلئے پانی سیراب ہوپائے گا۔ چیف منسٹر نے کہا کہ حالیہ عرصہ میں ہوئی بہتر بارش اور بہتر مانسون کے امکانات کو دیکھتے ہوئے تلنگانہ میں کسانوں کی دوسری فصل کو کوئی نقصان کا اندیشہ نہیں ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ جاریہ سال تلنگانہ میں بہتر فصلیں ہوں گی۔ چیف منسٹر نے کہا کہ 2800 ایکر اراضی پر ڈرپ اریگیشن اسکیم کے تحت پانی سربراہ کیا جارہا ہے اور یہ اسکیم کامیاب ثابت ہوئی ہے۔ انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ حکومت کی اسکیمات پر عمل آوری میں اپنا حصہ ادا کریں کیونکہ جب تک حکومت کو عوام کا تعاون حاصل نہیں ہوگا اس وقت تک بہتر نتائج کی اُمید نہیں کی جاسکتی۔

TOPPOPULARRECENT