Sunday , September 23 2018
Home / اضلاع کی خبریں / تمام محروم افراد کو راشن کارڈز کی اجرائی کا تیقن

تمام محروم افراد کو راشن کارڈز کی اجرائی کا تیقن

ظہیرآباد۔10اپریل ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ظہیرآباد منڈل پرجاپریشد کی جنرل باڈی کے آج منعقدہ اجلاس میں مشن کاکتیہ اسکیم کے تحت تالابوں سے نکالی گئی مٹی کی فروختگی کو روکنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کرسی صدارت کو یاد دلایا گیا کہ تالابوں سے نکالی گئی مٹی حکومت کی رہنمایانہ ہدایت کے مطابق صرف کھیتوں کی زرخیزی میں اضافہ کیلئے استعمال کی جاسکتی ہ

ظہیرآباد۔10اپریل ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ظہیرآباد منڈل پرجاپریشد کی جنرل باڈی کے آج منعقدہ اجلاس میں مشن کاکتیہ اسکیم کے تحت تالابوں سے نکالی گئی مٹی کی فروختگی کو روکنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کرسی صدارت کو یاد دلایا گیا کہ تالابوں سے نکالی گئی مٹی حکومت کی رہنمایانہ ہدایت کے مطابق صرف کھیتوں کی زرخیزی میں اضافہ کیلئے استعمال کی جاسکتی ہے ۔ شریک اجلاس اراکین منڈل پریشد اور سرپنچوں نے بعض مواضعات میں موسم گرما کے پیش نظر پینے کے پانی کی قلت کے مسئلہ سے نمٹنے میں ناکامی پر محکمہ دیہی آبرسانی پر الزام عائد کیا اور کہاکہ خبردار مذکورہ محکمہ اس مسئلہ کی عاجلانہ یکسوئی کرنے میں ناکام رہا تو اسے عوامی احتجاج کا سامنا کرنے کیلئے بھی تیار رہنا ہوگا ۔ اجلاس میں مستحقین کو تاحال وظائف جاری نہ کئے جانے اور انتہائی غربت کے شکار افراد کو انتودیا کارڈس کی اجرائی سے محروم رکھنے کی بھی شکایت کی گئی ۔ اجلاس میں سرکاری مدارس میں اساتذہ کی کمی کا مسئلہ بھی اٹھایا گیا ۔ ڈپٹی تحصیلدار جی جناردھن نے شرکاء اجلاس کو واقف کراتے ہوئے کہا کہ ظہیرآباد منڈل میں 54 اور میونسپلٹی ظہیرآباد میں 23ارزاں فروشی کی دکانات قائم ہیں جن کے ذریعہ 44,179 کارڈ گیرندوں کو ایک روپیہ فی کیلو چاول ‘ پانچ روپئے فی لیٹر کیروسین ‘ سات روپئے فی کیلو گیہوں اور 50روپئے فی کیلو کے حساب سے مسور کی دال سربراہ کی جاتی ہے ۔ انہوں نے ظہیرآباد منڈل کے جملہ مواضعات کو جاری کئے گئے فوڈ سیکیورٹی کارڈس کی تفصیلات سے بھی اجلاس کو واقف کرایا اور تاحال راشن کارڈس سے محروم خاندانوں کو کارڈس جاری کئے جانے کا یقین دلایا ۔ منڈل ایجوکیشن آفیسر نے ظہیرآباد منڈل میں جملہ 112 سرکاری مدارس میں 33ہزار سے زائد طلبہ زیر تعلیم ہونے کا انکشاف کیا اور اساتذہ کی کمی کے مسئلہ سے نمٹنے کیلئے موثر اقدامات کرنے کا تیقن دیا ۔ ایم پی ڈی او رام بابو نے واضح کیا کہ ایک مستحق کو ایک سے زیادہ فلاحی اسکیمات سے استفادہ کرنے کا حق حاصل نہیں ہے ۔ انہوں نے ظہیرآباد منڈل میں تاحال 1600 افراد آدھار کارڈ سے محروم رہنے کا انکشاف کیا اور عوامی نمائندوں پر زور دیا کہ وہ پنچایت سکریٹری کے تعاون سے آدھار کارڈ سے محروم افراد کو آدھار کارڈ دلانے کیلئے آگے آئیں ۔ محکمہ دیہی ترقیات کے عہدیدار نے مہاتما گاندھی قومی دیہی روزگار طمانیت اسکیم سے اور اندرا کرانتی پتھکم کے عہدیدار نے آئی کے پی اسکیم سے استفادہ کرنے والوں کی تعداد سے شرکاء اجلاس کو واقف کرایا ۔ صدر ظہیرآباد منڈل پرجا پریشد چرنجیوی پرساد کی زیر صدارت اجلاں میں محکمہ جات برقی ‘ آر ٹی سی ‘ عمارت و شوارع اور باغبانی کے عہدیداروں کی عدم شرکت پر برہمی کا اظہار کیا گیا اور ان کی عدم موجودگی کے خلاف تادیبی کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا گیا ۔ اس موقع پر اجلاس میں مانک ریڈی نائب صدر ‘ مانیا ‘ بھمیا ‘ سنیتا ‘ گیتی بائی ‘ محمد تاج الدین ‘ ناگ شٹی ‘ پریم سنگھ ‘ یچماں ‘ نارائنا ‘ بجماں ‘ میگھنا ‘ رام ریڈی ‘ لچھماں ‘ انیتا ‘ شانت کمار ‘ اکبر حسین اراکین منڈل پریشد کے بشمول گوتم ریڈی ‘ پرنماں‘ جگدیشور ‘ ویرا ریڈی ‘ امینہ بی ‘ چندرا کلا ‘ راجو ‘ سونا بائی ‘ ظہور الدین ‘ سنگماں ‘گ وپال ‘شنکریا ‘ انجنا ‘ آکاش ‘ ڈاکماں ‘ کاشنا ‘ رام کرشنا ریڈی ‘ کلاونی ‘ شنکر نائیک ‘ گیتی بائی اور رام شیٹی سرپنچوں نے شرکت کی ۔

TOPPOPULARRECENT