Saturday , December 15 2018

تمام پاکستانی فریقین سے پرامن سمجھوتہ کی خواہش

واشنگٹن۔ 20 اگست (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے پاکستان کے تمام فریقین سے اپیل کی کہ وہ تصادم سے باز آجائیں اور اپنے تمام اختلافات پرامن مذاکرات کے ذریعہ دُور کرلیں تاکہ ملک میں جمہوریت کو مستحکم کیا جاسکے۔ وزارت خارجہ امریکہ کی ترجمان ماری ہارف نے اپنی روزانہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ، اسلام آباد میں احتجاجی مظاہروں

واشنگٹن۔ 20 اگست (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے پاکستان کے تمام فریقین سے اپیل کی کہ وہ تصادم سے باز آجائیں اور اپنے تمام اختلافات پرامن مذاکرات کے ذریعہ دُور کرلیں تاکہ ملک میں جمہوریت کو مستحکم کیا جاسکے۔ وزارت خارجہ امریکہ کی ترجمان ماری ہارف نے اپنی روزانہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ، اسلام آباد میں احتجاجی مظاہروں پر گہری نظر رکھے ہوئے ہے اور تمام فریقین پر زور دے رہا ہے کہ تشدد سے گریز کریں۔ امریکہ کو یقین ہے کہ تمام فریقین اگر باہم تعاون کریں تو تمام اختلافات پرامن انداز میں دُور کئے جاسکتے ہیں جس کے نتیجہ میں پاکستان کی جمہوریت مستحکم ہوگی۔ یہ مستقل پیغام ہے جو ہم پاکستان میں ایک دوسرے کے خلاف صف آراء فریقین کو دینا چاہتے ہیں۔ وہ پریس کانفرنس میں ایک سوال کا جواب دے رہی تھیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کے کرکٹ کھلاڑی سے سیاست داں بننے والے اپوزیشن قائد تحریک انصاف پاکستان کے بانی صدر عمران خان اور عالم دین طاہرالقادری ، وزیراعظم نواز شریف سے استعفیٰ کا مطالبہ کررہے ہیں۔ انہوں نے آج اپنے ہزاروں حامیوں کے ساتھ پاکستانی پارلیمنٹ کی طرف جلوس نکالا تھا اور انتہائی سخت حفاظتی اقدامات کے تحت قائم قلعہ بند علاقہ ’’ریڈ زون‘‘ میں میں داخل ہوگئے تھے جہاںاسلام آباد کے سفارت کار اور سیاسی قائدین کی رہائش گاہیں ہیں۔ حکومت کی ان دونوں کے جلوس روکنے کی تمام کوششیں ناکام رہی تھیں۔ معمولی جھڑپوں کی اطلاعات بھی ملی ہیں جو حکومت کے حامیوں اور صیانتی عملہ کے درمیان ہوئی تھیں۔ عمران کی زیرقیادت احتجاجی مظاہرین کا مطالبہ تھا کہ گزشتہ سال کے پارلیمانی انتخابات میں مبینہ دھاندلیوں کی وجہ سے وہ اپنے عہدہ سے استعفیٰ دیں جبکہ طاہر القادری بھی چاہتے ہیں کہ نواز شریف کو اقتدار سے بے دخل کردیا جائے۔

TOPPOPULARRECENT