Thursday , October 18 2018
Home / شہر کی خبریں / تنخواہوں میں اضافہ کے مطالبہ پر بینک ملازمین کی ہڑتال

تنخواہوں میں اضافہ کے مطالبہ پر بینک ملازمین کی ہڑتال

حیدرآباد۔/12نومبر، ( سیاست نیوز) کنوینر یونائٹیڈ فورم آف بینک یونینس مسٹر ایم وی مرلی نے مرکزی حکومت اور انڈین بینک آف اسوسی ایشن سے پرزور مطالبہ کیا کہ وہ ملک بھر کے بینک ملازمین کی تنخواہوں پر نظر ثانی کرتے ہوئے ان کی تنخواہوں میں 25فیصد اضافہ کرے۔ بصورت دیگر ان کی یونین کی جانب سے 2ڈسمبر تا5ڈسمبر ملک بھر میں زونل سطح پر سلسلہ وار اح

حیدرآباد۔/12نومبر، ( سیاست نیوز) کنوینر یونائٹیڈ فورم آف بینک یونینس مسٹر ایم وی مرلی نے مرکزی حکومت اور انڈین بینک آف اسوسی ایشن سے پرزور مطالبہ کیا کہ وہ ملک بھر کے بینک ملازمین کی تنخواہوں پر نظر ثانی کرتے ہوئے ان کی تنخواہوں میں 25فیصد اضافہ کرے۔ بصورت دیگر ان کی یونین کی جانب سے 2ڈسمبر تا5ڈسمبر ملک بھر میں زونل سطح پر سلسلہ وار احتجاجی پروگرامس منظم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اس بات کا اعلان آج یہاں یونائٹیڈ فورم آف بینک یونینس کے زیر اہتمام منظم کردہ ایک روزہ ہڑتال کے موقع پر منعقدہ جلسہ عام کو مخاطب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ بینک ملازمین کو ہر 5سال میں ایک مرتبہ تنخواہوں پر نظر ثانی کی جاکر اضافہ کیا جاتا ہے لیکن گذشتہ 5سال کی میعاد کے باوجود گزشتہ دو سال سے تاہم بینک ملازمین کو حسب سابق 11فیصد اضافہ ہی دیا جارہا ہے جو سراسر ناانصافی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ دور حاضر میں بڑھتی ہوئی گرانی کے نتیجہ میں ملازمین کو ادا کی جانے والی تنخواہیں ناکافی ہیں جبکہ بینک ملازمین اپنی صحت اور وقت کی پرواہ کئے بغیر بینک کی آمدنی کے اضافہ کی کوشش میں ہمیشہ لگے رہتے ہیں

اور ملازمین کی محنت کے نتیجہ میں ہی بینک کو کروڑہا روپیوں کی آمدنی ہوتی ہے۔ اس کے باوجود ملازمین کے مسائل پر توجہ نہیں دی جاتی۔ انہوں نے کہا کہ گورنمنٹ بینکوں کے ملازمین پر کام کی زائد ذمہ داری ہوا کرتی ہے اور تمام پر دباؤ بھی رہتا ہے جبکہ خانگی بینکوں پر کوئی زائد ذمہ داریاں نہیں ہوتیں۔ انہوں نے مرکزی حکومت اور انڈین بینک اسوسی ایشن پر الزام عائد کیا کہ ان دونوں کی ملی بھگت کے نتیجہ میں بینک ملازمین کو درپیش مسائل جوں کے توں برقرار ہیں جن کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔ انہوں نے مرکزی حکومت اور انڈین بینک آف اسوسی ایشن کو انتباہ دیا کہ اگر وہ ملازمین کے مسائل پر توجہ نہ دے گی تو بینک ملازمین ملک گیر سطح پر بڑے پیمانے پر احتجاج پر اُتر آئیں گے۔ مسٹر ایم وی مرلی نے اس یقین کا اظہار کیا کہ آج کی منظم کردہ ہڑتال ملک بھر میں صد فیصد کامیاب رہی۔

انہوں نے بینک ملازمین کی تمام ٹریڈ یونینوں سے پرزور اپیل کی کہ وہ اپنے مطالبات کی یکسوئی کیلئے متحدہ طور پر جدوجہد میں حصہ لیں۔ اس موقع پر بینک ملازمین کی مختلف ٹریڈ یونینوں سے تعلق رکھنے والے قائدین مسرز پرکاش، دامودھر، وینکٹ رامیا، جی سبرامنیم، سدھا بھاسکر، نرسمہم، وینو گوپال کے علاوہ دیگر یونین قائدین نے بھی مخاطب کرتے ہوئے حکومت سے 25فیصد تنخواہوں میں اضافہ کرنے کا مطالبہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT