تکریت میں ہندوستانی نرسوں کی عمارت کے قریب بمباری و فائرنگ

نئی دہلی ۔ یکم جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان نے آج کہا کہ عراقی شہر تکریت کی جس عمارت میں 46 ہندوستانی نرسیں مقیم ہیں اس کے آس پاس بمباری اور فائرنگ کے واقعات پیش آئے ہیں لیکن یہ نرسیں بالکل محفوظ ہیں اور انہیں کوئی گزند نہیں پہونچی ہے ۔ ہندوستان نے اس امید کا اظہار کیا کہ مشکل صورتحال سے ان نرسوں کو باہر نکالنے میں کامیابی ملے گی ۔

نئی دہلی ۔ یکم جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان نے آج کہا کہ عراقی شہر تکریت کی جس عمارت میں 46 ہندوستانی نرسیں مقیم ہیں اس کے آس پاس بمباری اور فائرنگ کے واقعات پیش آئے ہیں لیکن یہ نرسیں بالکل محفوظ ہیں اور انہیں کوئی گزند نہیں پہونچی ہے ۔ ہندوستان نے اس امید کا اظہار کیا کہ مشکل صورتحال سے ان نرسوں کو باہر نکالنے میں کامیابی ملے گی ۔ حکومت کا کہنا ہے کہ اب تک جنگ زدہ ملک عراق سے 230 ہندوستانیوں کو نکال گیا ہے ۔ دفتر وزارت خارجہ کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا کہ مزید ایک ہزار افراد نے ان سے رابطہ کرتے ہوئے اس خواہش کا اظہار کیا ہے کہ وہ عراق سے نکلنا چاہتے ہیں۔ لگ بھگ اتنی ہی تعداد میں مزید ہندوستانی ایسے ہیں جو ان حالات میں بھی عراق میں رہنا چاہتے ہیں۔ ترجمان نے کہا کہ تکریت میں جس عمارت میں ہندوستانی نرسیں مقیم ہیں اس کے آس پاس بمباری اور فائرنگ کے واقعات ہوئے ہیں۔ ان نرسوں نے عمارت کے نچلے حصے ( بیسمنٹ ) میں پناہ لی ہے ۔ یہ لوگ انتہائی مشکل صورتحال کا شکار ہیں۔ ہم نے عراقی ایجنسیوں کو ان کے مقام سے واقف کروادیا ہے اور ہمیں یہ امید ہے کہ مشکل صورتحال کے باوجود بھی انہیں باہر نکالنے میں کامیابی مل سکتی ہے ۔ اس تعلق سے ہم پرامید ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ نرسیں بمباری اور فائرنگ کے واقعات کے باوجود محفوظ ہیں

اور انہیں کوئی گزند نہیں پہونچی ہیں۔ یہ نرسیں ہندوستانی سفارتخانہ سے رابطے میں ہیں۔ ترجمان نے یرغمال بنائے گئے 39 افراد کے تعلق سے کہا کہ ہندوستان یہ سمجھتا ہے کہ ابھی تک انہیں بھی کوئی نقصان نہیں پہونچایا گیا ہے ۔ ترجمان نے کہا کہ نیپال نے عراق میں پھنسے ہوئے اپنے باشندوں کی واپسی کیلئے ہندوستان سے مدد طلب کی ہے اور ہندوستان نے اسے مدد فراہم کرنے سے اتفاق کرلیا ہے ۔ عراق میں نیپال کا کوئی سفارتخانہ نہیں ہے ۔ ترجمان نے کہا کہ کل 94 ہندوستانی شہریوں نے وطن واپسی اختیار کی ہے مزید 136 افراد کو ہندوستان لایا جا رہا ہے اس طرح اب تک عراق سے واپس ہونے والے ہندوستانیوں کی تعداد 230 ہوجائیگی ۔ انہوں نے کہا کہ جو لوگ عراق سے واپس ہو رہے ہیں ان میں اکثریت شمالی ہندوستانیوں کی ہے اس کے بعد حیدرآباد اور کیرالا کے باشندوں کی تعداد ہے ۔ اس دوران عراق میں ہندوستانی عہدیداران ایک دوسرے سے تعاون کرتے ہوئے ضرورت مندوں کو ٹکٹس اور دیگر دستاویزات فراہم کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں تاکہ وہ ہندوستان واپس ہوسکیں۔

مغویہ افراد کی رہائی کیلئے
ہندوستان کی فرانس سے مدد طلبی
نئی دہلی ۔ یکم جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان نے عراق میں 39 مغویہ ہندوستانیوں کی رہائی کیلئے فرانس سے مدد طلب کی ہے ۔ یہ لوگ عراق میں اغوا کرلئے گئے ہیں۔ فرانس کے وزیر خارجہ لارینٹ فیبیاس کی ہندوستانی قائدین کے ساتھ ملاقاتوں میں یہ مسئلہ اٹھایا گیا ہے ۔ وزیر خارجہ فرانس نے اس مسئلہ پر بات چیت کی توثیق کی تاہم انہوں نے مزید تفصیلات بتانے سے گریز کیا کہ فرانس سے کیا مدد طلب کی گئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ضرور اس پر تبادلہ خیال ہوا ہے لیکن کیا تفصیلات ہیں یہ ابھی بتائی نہیں جاسکتیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپنی انٹلی جنس کی اطلاعات کا جائزہ لے رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT