Tuesday , December 18 2018

تھامس اور اوبیر کپ کا آج آغاز

نئی دہلی 17 مئی (سیاست ڈاٹ کام) ورلڈکپ کے معیار کا تصور کیا جانے والا ٹورنمنٹ تھامس اور اوبیر کپ پہلی مرتبہ ہندوستان میں منعقد کیا جارہا ہے اور کل یہاں شروع ہونے والے اِس ٹورنمنٹ میں ہندوستان کے نامور اور اُبھرتے بیڈمنٹن کھلاڑیوں کو بہتر مواقع فراہم رہیں گے جہاں وہ اپنی صلاحیتوں کو منوائیں گے۔ اِس ٹورنمنٹ میں ایشیائی کھلاڑیوں کا غل

نئی دہلی 17 مئی (سیاست ڈاٹ کام) ورلڈکپ کے معیار کا تصور کیا جانے والا ٹورنمنٹ تھامس اور اوبیر کپ پہلی مرتبہ ہندوستان میں منعقد کیا جارہا ہے اور کل یہاں شروع ہونے والے اِس ٹورنمنٹ میں ہندوستان کے نامور اور اُبھرتے بیڈمنٹن کھلاڑیوں کو بہتر مواقع فراہم رہیں گے جہاں وہ اپنی صلاحیتوں کو منوائیں گے۔ اِس ٹورنمنٹ میں ایشیائی کھلاڑیوں کا غلبہ رہا ہے جیسا کہ روایتی طور پر چین کو طاقت کا مرکز تصور کیا جاتا ہے اِس کے علاوہ انڈونیشیا، ملایشیا اور ہندوستان بھی خطاب کے دعویداروں میں شامل ہیں لیکن اِن ممالک کے کھلاڑیوں کے مظاہروں میں استقلال کا فقدان ہے۔ 1950 ء اور 1960 ء کے دہے میں ہندوستان سرفہرست ممالک میں شمار کیا جاتا تھا۔

اِس مرتبہ ہندوستانی کھلاڑیوں سے اُمید کی جارہی ہے کہ وہ کم از کم کوارٹر فائنلس تک رسائی حاصل کریں گے۔ ہندوستان نے ٹورنمنٹ کے خطابی مرحلہ تک 3 مرتبہ رسائی حاصل کی ہے جوکہ 1988 ء سے پہلے کی شاندار فتوحات ہیں۔ اُس موقع پر پرکاش پوڈکون اور مرحوم سید مودی کے ہمراہ ویمل کمار نے ہندوستان کے لئے تاریخ ساز فتوحات حاصل کی تھیں۔ 2000 ء میں ٹیم کے موجودہ کوچ اور اُس وقت کے کھلاڑی پلیلا گوپی چند نے ہندوستان کو قطعی مرحلہ تک پہنچایا تھا اور یہ مقابلے ملائیشیا کے شہر کوالالمپور میں منعقد ہوئے تھے۔ کل شروع ہونے والے ٹورنمنٹ میں سنگلز مقابلوں کے کھلاڑی پروپلی کیشپ ، سائنا نہوال اور پی وی سندھوکے علاوہ ڈبلز کی جوڑی اشونی پونپا اور جوالا گٹا سے فتوحات کی اُمید کی جارہی ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT