Monday , December 18 2017
Home / ہندوستان / تھانے میں ارکان خاندان کے قتل عام میں ملوث نوجوان نفسیاتی مریض

تھانے میں ارکان خاندان کے قتل عام میں ملوث نوجوان نفسیاتی مریض

پولیس کو کالے جادو کے اثرات کا بھی شبہ۔ پابند مذہب ہونے کے باوجود گھناؤنی حرکت
تھانے 3 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) خاندان کے تمام 14 ارکان کا قتل عام کرنے والے نوجوان کے تعلق سے پولیس نے شبہ ظاہر کیا ہے کہ وہ منتشر ذہن نوجوان تھا اور نفسیاتی مریض بھی ہوسکتا ہے۔ اس کی وجہ سے اس نے یہ گھناؤنی حرکت کی۔ پولیس کے ایک سینئر عہدیدار نے جو تحقیقاتی ٹیم کے رکن ہیں، کہاکہ وہ تمام حالات و واقعات کو یکجا کرتے ہوئے اس نتیجہ پر پہونچنے کی کوشش کررہے ہیں کہ آیا 35 سالہ حسنین واریکر نے اپنے 14 ارکان خاندان کو کس وجہ سے قتل کیا۔ اس کے مکان کی تلاشی کے دوران پولیس کو نفسیاتی مریضوں کو کھلانے والی بعض دوائیں بھی دستیاب ہوئیں۔ پولیس فارمسسٹ اور ڈاکٹر سے ربط پیدا کرنے کی کوشش کررہی ہے۔ مقامی افراد نے حسنین کو ایک اچھی فطرت کا حامل مذہبی نوجوان بتایا۔ وہ درگاہ حضرت صلاح الدین شاہ باباؒ پر بھی پابندی سے حاضری دیا کرتا تھا۔ پولیس نے اس کے ذہنی انتشار کو کالے جادو کے اثر کا بھی شبہ ظاہر کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT