Thursday , July 19 2018
Home / شہر کی خبریں / تھرڈ پارٹی انسپیکشن ٹیمس کو مامور کرنے واٹر بورڈ کی تجویز

تھرڈ پارٹی انسپیکشن ٹیمس کو مامور کرنے واٹر بورڈ کی تجویز

سنگل ونڈو سیل میں چند اصلاحات کا آغاز ، فیلڈ آفیسرس کو نئے کنکشنس کی منظوری کا اختیار
حیدرآباد ۔ 2 ۔ اپریل : ( رتنا چوٹرانی ) : حیدرآباد میٹرو پولیٹن واٹر سپلائی اینڈ سیوریج بورڈ ( ایچ ایم ڈبلیو ایس اینڈ ایس بی ) نے تھرڈ پارٹی انسپیکشن ٹیمس کو مامور کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ بورڈ کے تمام نئے کنکشنس معیار کے مطابق ہوں اور سڑکوں کے مرمتی کام بھی گرین بریگیڈ کنٹراکٹرس کو جاری کئے گئے رہنمایانہ خطوط کے مطابق انجام پائیں ۔ تھرڈ پارٹی انسپیکشن ٹیمس کو مامور کرنے کی تجویز ہے کیوں کہ واٹر بورڈ نے سنگل ونڈو سیل ( SWC ) میں بعض اصلاحات شروع کئے ہیں اور نئے کنکشنس منظور کرنے کے لیے فیلڈ آفیسرس کو اختیارات دیئے ہیں تاکہ یہ سسٹم شہریوں کے لیے آسانی کا باعث ہو ۔ واٹر بورڈ نئے منظورہ کنکشنس کو معیاری پروسیجر کے مطابق اور روڈ ریسٹوریشن کے کام کو گرین بریگیڈ کنٹراکٹرس کو جاری کئے گئے رہنمایانہ خطوط کے مطابق یقینی بنانے کا خواہاں ہے ۔ بورڈ کا منصوبہ اس طرح کے کم از کم تین تھرڈ پارٹی انسپیکشن ٹیمس کو مامور کرنے کا ہے ۔ ایچ ایم ڈبلیو ایس اینڈ ایس بی کے عہدیداروں کے بموجب تھرڈ پارٹی انسپیکشن ٹیمس کا رول سائٹ پر واٹر بورڈ کے منیجرس کی جانب سے پیش کی جانے والی فیزیبلٹی رپورٹ میں مذکورہ پلاٹ ایریا اور پلنتھ ایریا کا کراس چیک کرنا ہوگا ۔ یہ ٹیم منظورہ کنکشن کے زمرہ کا بھی چیک کرے گی اور درخواست گذار کی جانب سے داخل کیے جانے والے دستاویزات کی جانچ بھی کرے گی ۔ درخواست گذار پر عائد کئے گئے امپرومنٹ چارجس کی تصدیق کرے گی ۔ یہ ٹیمس سڑکوں کی بحالی کے کام کے معیار کی بھی تصدیق کریں گی ۔ تمام فیلڈ رپورٹس کو الاٹمنٹ کی تاریخ سے اندرون دو دن داخل کرنا ہوگا ۔ کنسلٹنٹ کو اس پراجکٹ پر عمل درآمد کے لیے فنڈ کے وصولی میں واٹر بورڈ کی مدد بھی کرنی ہوگی ۔ اس کے لیے واٹر بورڈ نے تھرڈ پارٹی انسپیکشن ٹیمس کیلئے دلچسپی کا اظہار طلب کیا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT